منگل 24 ذوالحجہ 1442ﻫ - 3 اگست 2021

کورونا بحران:ہر امریکی شہری کے لئے دو ہزار ڈالرز ماہانہ ادائیگی کا بل متعارف

واشنگٹن( پرو اردو رپورٹ)امریکی ایوان نمائندگان میں ڈیموکریٹس نے ایک بل متعارف کرایا ہے جس کے تحت ہر امریکی شہری کو کورونا بحران کے طور 2 ھزار ڈالرز ماہانہ دینے کی سفارش کی گئی ہے بل میں اقتصادی ریلیف پیکج کے تحت 1200 ڈالر کو ناکافی قرار دیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ بدترین بحرانی صورتحال میں امریکی عوام کو کیش امداد کی فوری ضرورت ہے اسلئے ہر امریکی شہری کو آیندہ چھے ماہ تک 2 ہزار ڈالرز ماہانہ دئے جائیں.بل دو ڈیموکریٹک اراکین کانگریس ٹم ریان اور رو کھنّہ نے متعارف کرایا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ایک لاکھ تیس ہزار ڈالرز سالانہ سے کم کمانے والے 16 سال یا زائد عمر کے ہر امریکی شہری کو آئندہ چھے ماہ یا بیروزگاری کی شرح کم ہونے تک مذکورہ رقم ہر ماہ دی جائے تاکہ Covid-19 کی وجہ سے وہ جن مشکلات سے دوچار ہیں اس کا ازالہ ہوسکے.منگل کے روز ایمرجنسی منی فار پیپلز ایکٹ کے تحت متعارف کرائے گئے بل کو 17 اراکین کانگریس کی حمایت حاصل ہے یہ تمام اراکین ڈیموکریٹس کے ماڈریٹ ونگ سے تعلق رکھتے ہیں.یہ بل ایسے وقت میں متعارف کرایا گیا ہے جب امریکنز عوام کو Stimulus Package کے تحت انکے بنک میں ڈائرکٹ ڈیپازٹ کے ذریعے 1200 ڈالرز ملنا شروع ہوگئے ہیں. خیال کیا جارہا ہے صدر ٹرمپ اسی طرح کا پیکج آیندہ ماہ بھی جاری کریں گے جس کے تحت مئی میں بھی فی کس 1200 ڈالرز اور فیملی کو 3400 ڈالرز تک ملیں گے.

یہ بھی دیکھیں

وزیراعلیٰ سندھ سیدمراد علی شاہ کا کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بیان۔ 

وزیراعلیٰ سندھ سیدمراد علی شاہ کا کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بیان۔ گزشتہ 24 …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے