منگل 24 ذوالحجہ 1442ﻫ - 3 اگست 2021

ریاض ایس اے اے ادریس کے الیکٹرک کے نئے چیئرمین منتخب

کراچی، کے الیکٹرک لمٹیڈ کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے جناب ریاض ایس اے اے ادریس کو، 09اپریل،2020ء سے، کمپنی کا نیا چیئرمین منتخب کر لیا ہے۔اْن کا انتخاب بورڈ کے حالیہ اجلاس کے دوران کیا گیا۔

جناب ادریس، جنہیں تعمیر، مالیات، تیل اور گیس کے علاوہ ٹیلی کمیونی کیشنز اور تعلیم و تدریس کے شعبوں میں تقریباً25 برس کا تجربہ حاصل ہے، ابتدائی طور پر کے الیکٹرک کے بورڈ میں، نومبر 2005ء میں، نجکاری کے موقع پرشامل ہوئے اور مئی 2009ء تک اپنے فرائض انجام دیتے رہے۔ جناب ادریس نے کے الیکٹرک کے بورڈ آف ڈائریکٹرز میں گزشتہ برس جولائی میں دوبارہ شمولیت اختیار کی۔ جناب ادریس میزان بینک لمٹیڈ-پاکستان کے چیئرمین اور ایکاروس پٹرولیم انڈسٹریز کے چیئرمین اور مینیجنگ ڈائریکٹر ہونے کے علاوہ متعدد دیگر کمپنیوں میں بھی بورڈ آف ڈائریکٹرز کے رْکن ہیں۔وہ نیشنل انڈسٹریز گروپ ہولڈنگ، کویت میں بھی ڈپٹی چیف ایگزیکٹو آفیسر کے عہدے پر فرائض انجام دے چکے ہیں۔ جناب ادریس نے یونیورسٹی آف نیو کاسل سے کیمیکل انجینئرنگ میں بیچلرز آف سائنس کے علاوہ کویت یونیورسٹی سے کیمیکل انجینئرنگ میں ماسٹرز آف سائنس کی ڈگری بھی حاصل کی ہے۔

بورڈ آف ڈائریکٹرز نے جناب ادریس میں موجود قائدانہ صلاحیتیوں پر اعتماد کا اظہار کیا کیونکہ کمپنی ترقی و توسیع کے تحریکی مرحلہ کا کام کررہی ہے اور اسے اُن کی قائدانہ صلاحیتیوں سے یقینا فائدہ پہنچے گا۔

اس موقع پر نو منتخب چیئرمین نے کہا:”نئے چیئرمین کی حیثیت سے کے الیکٹرک کی قیادت کرنا میرے لیے باعث فخر ہے۔پاور سیکٹر میں ایک رجحان ساز ادارے کی حیثیت سے کے الیکٹرک کی نجکاری ایک کامیاب مثال کے طور پر ابھر کر سامنے آئی ہے اور میں اپنے تمام اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر، کمپنی کو مزید آگے لے جانے کے لیے پرعزم ہوں۔“

کے الیکٹرک کی نقصان میں چلنے والے اور قرضوں سے دوچار اسٹریٹجک اثاثے کے طور پر ایک اہم انرجی پلیئر میں تبدیلی، ملکی سطح پر انتہائی منظم اور آپریشنل تاریخی کامیابیوں میں سے ایک ہے،جس کیلئے ادارے کے مختلف شعبوں میں 2.4ارب امریکی ڈالر سے زیادہ کی سرمایہ کاری کی گئی ہے اور ادارہ موجودہ کامیابیوں میں مزیداضافہ کرنے کی بہترین صلاحیت کا حامل ہے۔ کے الیکٹرک کووسیع ٹیلنٹ پر مشتمل انڈسٹری ماہرین کی خدمات حاصل ہیں اور لیڈرشپ ٹیم کسٹمر فرسٹ اپروچ، سیفٹی، پائیداری کے اقدامات اور ریگولیٹری اسٹریٹجی کے ساتھ ساتھ،باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت تمام کاروباری شعبوں میں آئندہ چار برسوں کے دوران، تقریباً 3ارب امریکی ڈالرز کے اقدامات کے ذریعے اسٹریٹجک ترجیحات پرعمل درآمد کرنے کے لیے پر عزم ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے