منگل 1 رمضان 1442ﻫ - 13 اپریل 2021

تارکین وطن کی کورونا سے ہلاکتیں : نیویارک میں ٹرمپ انٹرنیشنل کے باہر انوکھا مظاہرہ


مین ہٹن نیویارک سٹی میں واقع مشہور ترین سینٹرل پارک کے باہر واقع ٹرمپ انٹرنیشنل ہوٹل کے سامنےعلامتی نعشوں کی قطار. نعشیں امیگریشن کی حراست میں مرنے والوں کی نمائندگی کے لئے ہیں

نیویارک( پرواردو رپورٹ )مظاہرین کے ایک گروپ نے تارکین وطن کی نمائندگی کرتے ہوئے متعدد علامتی نعشوں کے بیگز احتجاجا”نیویارک سٹی میں واقع ٹرمپ انٹرنیشنل کے باہر رکھ دیا.. یہ ان تارکین وطن کی علامتی نعشیں تھیں جو امیگریشن اینڈ کسٹمز انفورسمنٹ ( ICE) کی حراست کے دوران کورونا وائرس کی وجہ سے جاں بحق ہوگئے تھے.یہ واقعہ صدر ٹرمپ کی اس کورونا پریس کانفرنس کے چند گھنٹوں کے بعد پیش آیا تھا جس میں انہوں نے ڈیموکریٹس کو بدتمیز اور بیہودہ قرار دیتے ہوئے سی این این، نیویارک ٹائمز اور واشنگٹن پوسٹ جیسے مین سٹریم مرکزی امریکن میڈیا کو حسب معمول جعلی اور جھوٹا کہا تھا.علامتی نعشوں کے متعدد بیگز سینٹرل پارک ہوٹل کے باہر رکھے گئے تھے.ان بیگز میں نوٹس بھی چسپاں تھے جن میں پڑھا جا سکتا تھا کہ “ یہ ان تارکین وطن کی نمائندگی کرتی جو ICEکی حراست میں کورونا سے جاں بحق ہوگئے اور انکی موت ٹرمپ کے سر پر ہے.احتجاجی گروپ نے خود کو “فاشزم کے انکاری” ( Refuse Facism) بتایا. شرکاء نے پلے کارڈز بھی اٹھا رکھے تھے.صدر ٹرمپ نے ڈیموکریٹس اور میڈیا کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا بحران میں ان لوگوں کا کوئی کردار نہیں ہے یہ جعلساز اور بدتمیزوں کا ٹولہ ہے.میرا خیال تھا بحرانی صورتحال میں ان کا طرز عمل تبدیل ہوگا مگر یہ لوگ زیادہ بدتر ثابت ہوئے ہیں.انہوں نے کہا کہ ڈیموکریٹس کو شرم آنی چائیے وہ کورونا وائرس پر سیاست کھیل رہے ہیں اور اس کے ذریعے 3 نومبر کو صدارتی الیکشن میں کامیابی کے خواب دیکھ رہے ہیں.

یہ بھی دیکھیں

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار کا پیغام۔ 

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے