ہفتہ 22 ربیع الثانی 1443ﻫ - 27 نومبر 2021

علما اور مشائخ کے ساتھ مشاورتی اجلاس کے بعد صدر عارف علوی کا 20 نکاتی تجاویز کا اعلان

20 نکاتی تجاویز:

  1. مساجد اور امام بارگاہوں میں کالین یا دریاں نہیں بچھائی جائیں گی۔
  2. جو گھر سے جائے نماز لانا چاہیں وہ ایسا ضرور کریں
  3. نماز سے پہلے اور بعد میں ہجوم لگانے سے پرہیز کریں۔
  4. جہاں صحن موجود ہو وہاں ہال کی بجائے صحن میں نماز پڑھائی جائے۔
  5. 50 سال سے زائد عمر، نابالغ بچے اور کھانسی، نزلہ، بخار سے متاثرہ افراد مسجد میں نہ جائیں۔
  6. مسجد کے احاطے میں نماز تراویح کا اہتمام کیا جائے، فٹ پاتھ پر نہ پڑھی جائے۔
  7. کلورین کے محلول کے ذریعے مساجد کو دھویا جائے۔
  8. صف بندی کا اہتمام ایسے کیا جائے کہ دو نمازیوں کے درمیان دو نمازیوں کی جگہ خالی چھوڑی جائے۔
  9. مساجد میں کمیٹیاں بنائی جائیں جو اس بات کو یقینی بنائیں کے تجاویز پر عمل ہو اور نشانات لگائے جائیں۔
  10. وضو گھر میں کریں، 20 سیکنڈ تک ہاتھ صابن سے دھوئیں۔
  11. ماسک پہن کر مساجد میں آنا لازمی قرار، دوسروں سے بغل گیر نہ ہوں، ہاتھ نہ ملائیں۔
  12. موجودہ صورتحال میں بہتر یہ ہے کہ گھر پر اعتکاف بیٹھیں۔
  13. مسجد میں سحری اور افطاری کا اجتماعی اہتمام نہ کیا جائے
  14. چہرے پر ہاتھ نہ لگائیں۔
  15. مسجد اور امام بارگاہ کی انتظامیہ ضلعی انتظامیہ اور پولیس کے ساتھ رابطہ رکھیں۔
  16. ان احتیاطی تدابیر کے ساتھ تراویح اور باجماعت نماز مشروط ہے
  17. اگر حکومت یہ محسوس کرے کہ ان احتیاطی تدابیر پر عمل نہیں ہو رہا یا متاثرین کی تعداد بڑھ گئی ہے تو حکومت اس حوالے سے فیصلے پر نظر ثانی کر سکتی ہے۔
  18. حکومت کے پاس یہ بھی اختیار ہے کہ مخصوص علاقوں میں متاثرین اور حالات کے حساب سے مختلف پالیسی اختیار کی جائیں

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے