اتوار 1 جمادی الاول 1443ﻫ - 5 دسمبر 2021

کورونا اور کتنے گل کھلائے گا: کل تک آن لائن اور فون نکاح پر سوال اٹھانے والے امریکی آج آن لائن شادی کے حامی ہوگئے

نیویارک ( خصوصی رپورٹ) مسلمانوں میں فون پر شادیوں کا سلسلہ کافی پرانا ہے ماضی میں جب سات سمندر پار سے ایجاب و قبول کا مسئلہ درپیش آتا تھا تو مستند علماء کرام کی مشاورت سے دولہا دولہن کے گھر والے فون پر نکاح پڑھوادیا کرتے تھے جس کے بعد اگر لڑکا باہر ہو تو اپنی دولہن کے لئے قانونی کاغذات کی تیاری میں جڑ جاتا تھا اور لڑکی کے پردیس میں ہونے کی صورت میں وہ ان دیکھے اور ان جانے شوہر کو اپنے پاس بلانے کی کوششیں شروع کر دیتی تھی. انفارمیشن ٹیکنالوجی نے جب تک ترقی نہیں کی تھی فون ایسی شادیوں کا سب سے بڑا ذریعہ تھا انسانی ترقی کے ساتھ ساتھ نکاح کے طور بھی ترقی پاتے گئے. لیکن ایسے رشتوں پر مغرب و امریکہ میں اعتراضات بھی اٹھتے رہے ہیں بعض اوقات ایسی شادیوں کو پیپر کے حصول کا ذریعہ سمجھ کر انہیں مسترد یا ان کو مشکل سے منظور کیا جاتاہے. مگر حالیہ کورونا وائرس نے جہاں انسانوں کو انسانوں سے لڑائی جھگڑے اور نفرت و تعصب کے بغیر ہی دور کردیا وہی مغرب میں کل تک قابل اعتراض سمجھے جانے والے آن لائن نکاح سرٹیفیکٹ اور ویڈیو کے ذریعے شادی کو جائز تسلیم کرلیا گیا ہے. نیویارک سٹیٹ کے گورنر اینڈریو کومو نے آن لائن شادی کے سرٹیفکیٹ کے اجرا کو قانونی قرار دیتے ہوئے ویڈیو کانفرنسنگ، ژوم ویبینار کے ذریعے شادی کی رسم کو جائز تسلیم کرلیا ہے. نیویارک میں متعلقہ ادارے کو حکم دیا گیا ہے خواہشمند جوڑوں کو سرٹیفیکیٹ جاری کردیا جائے. اور ساتھ ہی ساتھ یہ بھی کہا گیا ہے کہ آن لائن شادی کی رسومات ادا کرنے کی بھی اجازت ہوگی. کورونا کی وجہ سے جسطرح دنیا بھر میں معاشرتی قدریں بدل رہی ہیں یہ کہا جا سکتا ہے کہ کورونا کے بعد کورونا سے پہلے کی دنیا مختلف ہوگی.

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے