اتوار 15 ذوالحجہ 1442ﻫ - 25 جولائی 2021

ﺳﻨﺪﮪ ﮨﺎﺋﯿﮑﻮﺭﭦ ﻣﯿﮟ ﺷﺮﺍﺏ ﺧﺎﻧﻮﮞ ﮐﻮ ﻻﺋﺴﻨﺲ ﮐﮯ ﺍﺟﺮﺍ ﮐﮯ ﺧﻼﻑ ﺩﺭﺧﻮﺍﺳﺖ ﮐﯽ ﺳﻤﺎﻋﺖ

ﮐﺮﺍﭼﯽ : ﺳﻨﺪﮪ ﮨﺎﺋﯽ ﮐﻮﺭﭦ ﻧﮯ ﻣﺤﮑﻤﮧ ﺍﯾﮑﺴﺎﺋﺰ ﺳﮯ 29ﺍﭘﺮﯾﻞ ﺗﮏ ﺭﭘﻮﺭﭦ ﻃﻠﺐ ﮐﺮﺗﮯ ﮨﻮﺋﮯ ﺣﮑﻢ ﺩﯾﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻭﮦ ﻗﺎﻧﻮﻥ ﮐﮯ ﺳﺎﻣﻨﮯ ﭘﯿﺶ ﮐﺮﯾﮟ ﺟﺲ ﮐﮯ ﺗﺤﺖ ﺻﻮﺑﮯ ﻣﯿﮟ ﺷﺮﺍﺏ ﺧﺎﻧﮯ ﮐﮭﻮﻟﮯ ﮔﺌﮯ۔ ﺳﻨﺪﮪ ﮨﺎﺋﯿﮑﻮﺭﭦ ﻣﯿﮟ ﺷﺮﺍﺏ ﺧﺎﻧﻮﮞ ﮐﻮ ﻻﺋﺴﻨﺲ ﮐﮯ ﺍﺟﺮﺍ ﮐﮯ ﺧﻼﻑ ﺩﺭﺧﻮﺍﺳﺖ ﮐﯽ ﺳﻤﺎﻋﺖ ﮨﻮﺋﯽ۔ ﺍﯾﮉﯾﺸﻨﻞ ﺍﯾﮉﻭﻭﮐﯿﭧ ﺳﻨﺪﮪ ﺍﻭﺭ ﮈﺍﺋﺮﯾﮑﭩﺮﺍﯾﮑﺴﺎﺋﺰ ﺑﮭﯽ ﻋﺪﺍﻟﺖ ﻣﯿﮟ ﭘﯿﺶ ﮨﻮﺋﮯ۔ ﺟﺴﭩﺲ ﻣﺤﻤﺪ ﻋﻠﯽ ﻣﻈﮩﺮ ﻧﮯ ﺍﺳﺘﻔﺴﺎﺭ ﮐﯿﺎ ﮐﮧ ﮐﻦ ﺷﺮﺍﺋﻂ ﭘﺮ ﺷﺮﺍﺏ ﺧﺎﻧﻮﮞ ﮐﻮ ﻻﺋﺴﻨﺲ ﺟﺎﺭﯼ ﮐﯿﮯ ﺟﺎﺗﮯ ﮨﯿﮟ؟ ﮨﻤﯿﮟ ﯾﮧ ﺩﯾﮑﮭﻨﺎ ﮨﮯ ﺟﻮ ﻻﺋﺴﻨﺲ ﺟﺎﺭﯼ ﮐﯿﺎ ﮔﯿﺎ ﻭﮦ ﻗﺎﻧﻮﻥ ﮐﮯ ﻣﻄﺎﺑﻖ ﮨﮯ ﯾﺎ ﻧﮩﯿﮟ؟ ﺍﯾﮉﯾﺸﻨﻞ ﺍﯾﮉﻭﻭﮐﯿﭧ ﺳﻨﺪﮪ ﻧﮯ ﺑﺘﺎﯾﺎ ﻻﺋﺴﻨﺲ ﺟﺎﺭﯼ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﯽ ﺩﯾﮕﺮ ﺷﺮﺍﺋﻂ ﻣﯿﮟ ﯾﮧ ﺑﮭﯽ ﺷﺎﻣﻞ ﮨﻮﺗﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺗﻌﻠﯿﻤﯽ ﺍﺩﺍﺭﮮ ،ﻣﺴﺎﺟﺪ ﺍﻭﺭ ﻣﺪﺍﺭﺱ ﮐﮯ ﻗﺮﯾﺐ ﺷﺮﺍﺏ ﺧﺎﻧﮯ ﻧﮩﯿﮟ ﮐﮭﻮﻟﮯ ﺟﺎﺋﯿﮟ ﮔﮯ۔ ﮈﺍﺋﺮﯾﮑﭩﺮ ﺍﯾﮑﺴﺎﺋﺰ ﻧﮯ ﻋﺪﺍﻟﺖ ﮐﻮ ﺑﺘﺎﯾﺎ ﮐﮧ ﻻﺋﺴﻨﺲ ﺟﺎﺭﯼ ﮐﺮﻧﮯ ﺳﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﺍﻥ ﺳﺎﺭﯼ ﭼﯿﺰﻭﮞ ﮐﺎ ﺧﯿﺎﻝ ﺭﮐﮭﺎ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ۔ ﺷﺮﺍﺏ ﺧﺎﻧﮧ ﻭﮨﺎﮞ ﮐﮭﻮﻟﻨﮯ ﮐﯽ ﺍﺟﺎﺯﺕ ﮨﮯ ﺟﮩﺎﮞ ﻏﯿﺮﻣﺴﻠﻢ ﺁﺑﺎﺩ ﮨﻮﮞ۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے