جمعرات 16 صفر 1443ﻫ - 23 ستمبر 2021

کورونا ابھی دنیا میں اور زیادہ تباہی پھیلائے گا:WHO کا انتباہ

جنیوا(پرو اردو)عالمی ادارہ صحت  نے خبردار کیا ہے کہ کورونا وائرس کی سختیاں ابھی باقی ہیں نسل انسانی کو ابھی مزید بدترین صورتحال کا سامنا کرنا ہوگا.ورکڈ ہیلتھ آرگنائزیشن نے خطرے کی یہ گھنٹی ایسے وقت میں بجائی ہے جب بیشتر ممالک وبا کی رفتار میں کمی کے پیش نظر پابندیوں میں نرمی کے اقدامات کا جائزہ لینے میں مصروف ہیں. بلکہ پاکستان جیسے ملک میں حفاظتی اقدامات کی ہدایات کے ساتھ پبلک ٹرانسپورٹ سسٹم اور کچھ کاروبار کو کھول دیا ہے. جس پر WHO سمیت کچھ عالمی اداروں کی طرف سے تحفظات کا اظہار بھی کیا جارہا ہے. بین الاقوامی خبر رساں ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کے مطابق عالمی ادارہ صحت کے ڈائریکٹر جنرلُ ٹیڈور اڈھانوم گیبریوس نے اس بات کی وضاحت نہیں کی کہ Covid-19 جو پہلے ہی دنیا بھر میں 25 لاکھ سے زیادہ افراد کو متاثر اور ایک لاکھ 70 ہزار افراد کی جان لے چکا ہے کیونکر مذید بدتر ہوسکتا ہے.تاہم وہ اور انکے دیگر اس بات کااشارہ دے چکے ہیں کہ کورونا مستقبل میں افریقہ میں تباہی مچائے گا جہاں صحت کا نظام انتہائی ناقص ہے.جنیوا میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ یقین کریں ابھی بدترین صورتحال آنی باقی ہے جب کورونا کہیں زیادہ تباہ کن ثابت ہوسکتا ہے.انہوں نے کہا کہ ابھی کئی لوگ اس وائرس کو سمجھ ہی نہیں سکے ہیں.بعض ایشین اور یورپی ممالک لاک ڈاؤن میں نرمی کرچکے ہیں یا اسکے لئے اقدامات کررہے ہیں. ان اقدامات میں قرنطینہ( Quarantine)، سکول و بزنس، عوامی اجتماعات شامل ہیں. نرمی کا جواز یہ ممالک اموات اور نئے کیسز میں کمی بتاتے ہیں.مسٹر ٹیڈور اور انکی ایجنسی صدر ٹرمپ کی جانب سے گزشتہ ایجنسی کی فنڈنگ کی بندش کے اقدام کے بعد دفاعی پوزیشن اختیار کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں.واضح رہے کہ امریکہ WHO کا سب سے بڑا واحد ڈونر ہے.صدر ٹرمپ کا ایجنسی پر الزام ہے کہ اس نے ابتدا میں کورونا کی روک تھام کے لئے خاطر خواہ اقدامات نہیں کئے تھے.

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے