منگل 6 شوال 1442ﻫ - 18 مئی 2021

رفاقتیں کیا کیا

کچھ دن پہلے خالد معین صاحب کی کتاب ‘رفاقتیں کیا کیا’ کو پڑھ کر مکمل کیا، جس میں ان کی زندگی کے مختلف ادوار کو دیکھا، کئ قریبی لوگوں سے بچھڑنے کو محسوس کیا اور زندگی کو آگے بڑھاتے ہوئے بھی پایا، دوست احباب ان سے محبت کرتے دکھائی دئیے، ہر ایک کے مزاج کا اپنا اپنا منفرد رنگ نظر آیا جو خالد معین صاحب نے بہت خوبصورتی سے بیان کیا، خود ان کا ذکر خاص طور پر پوری کتاب میں کہیں نہیں ملا اس کے باوجود اسے پڑھتے ہوئے لگتا ہے کہ دوست احباب کو بیان کرتے ہوئے خود خالد معین صاحب کی پہچان بھی ہوتی جا رہی ہے، میں نے ان رفاقتوں کو ایسے ہی سمجھنے کی کوشش کی جیسے وہاں ان کے ساتھ نظر آئیں، شاعری کا حُسن جگہ جگہ بکھرا ہوا ملا جس سے مطالعے میں شغف برقرار رہا، یوں کہہ لیجیے کہ اس کتاب کو مکمل کیے بغیر رکھ دینا مشکل کام ہے

خالد معین صاحب کا ایک خوبصورت شعر

کچّی عمر میں کل کے دکھوں سےآج الجھنا ٹھیک نہیں
پہلا ساون بھیگنے والو شاد رہو آباد رہو

طالبِ دعا
سارہ محبوب

یہ بھی دیکھیں

پاکستان کوسٹ گارڈزکی اسمگلنگ کے خلاف مختلف کاروائیاں۔ترجمان کوسٹ گارڈز۔ 

پاکستان کوسٹ گارڈزکی اسمگلنگ کے خلاف مختلف کاروائیاں۔ ترجمان کوسٹ گارڈز۔ گوادر شہر کے قریب …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے