جمعرات 26 ذوالحجہ 1442ﻫ - 5 اگست 2021

پاکستان بیت المال کی طرف سے لاک ڈاؤن سے متاثر ہ خواجہ سراؤں میں راشن تقسیم

اسلام آباد، پاکستان بیت المال کی طرف سے لاک ڈاؤن سے متاثر ہ خواجہ سراؤں میں راشن تقسیم کرنے کی ایک سادہ مگر منظم تقریب منعقد ہوئی جس میں وزیر برائے انسانی حقوق ڈاکٹر شیریں مزاری، منیجنگ ڈائریکٹر پاکستان بیت المال عون عباس بپی اور خواجہ سراؤں کے حقوق کی ماہر نایاب علی نے شرکت کی۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر شیریں مزاری نے بتایا کہ پمز ہسپتال میں خواجہ سراؤں کے لیے وارڈ بنا دیا گیا ہے جبکہ ملک دوسرے صوبائی ہسپتالوں کو بھی ان کے لیے علیحدہ وارڈ بنانے کا کہ دیا گیاہے۔ انہوں نے خواجہ سراؤں کو برابری کی سطح پر مستفید کرنے پر پاکستان بیت المال کے کردار کو سراہا۔

تقریب سے خطاب کرتے ہوئے منیجنگ ڈائریکٹر پاکستان بیت المال عون عباس بپی نے ان اقدامات سے آگاہ کیا جن کی بدولت ملک کے محروم اور کمزور طبقات کو جنس، مذہب، ذات پات اور سیاست سے بالا تر ہو کر مستفید کیا جارہا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ تعلیم، صحت، معاشی بحالی اور خود انحصاری سمیت تمام فلاحی منصوبوں میں تمام پاکستانی مستحق شہریوں کو برابری کی سطح پر سماجی تحفظ کے دائرہ کار میں لایا جارہا ہے۔ ایم۔ڈی پاکستان بیت المال کا کہنا تھا کہ کرونا وائرس سے پیدا صورتحال سے جہاں معاشرے کا دہاڑی دار اور محنت کش طبقہ متاثر ہوا ہے وہاں خواجہ سراء بھی بری طرح معاشی استحصال کا شکار ہوئے ہیں جن کی معانت کرنا وقت کی اہم ضرورت ہے۔ ایم۔ڈی پاکستان بیت المال عون عبّاس بپّی نے اس عزم کا اظہار کیا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ہدایات پر عمل کرتے ہوئے موجودہ صورتحال سے نبٹنے کے لیے نادار اور غریب افراد کی ہر ممکن امداد کے لیے اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ خواجہ سراؤں کے حقوق کی ماہر نایاب علی نے اس مشکل وقت میں خواجہ سراؤں کے لیے ہمدردی اور امداد پر پاکستان بیت المال کا شکریہ ادا کیا۔ اس موقع پر 250مستحق خواجہ سراؤں میں منظم انداز سے راشن تقسیم کیا گیا۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے