اتوار 4 شوال 1442ﻫ - 16 مئی 2021

ڈاکٹر فرقان الحق کی کورونا کی وجہ سے 3مئی کو شہادت پربیحد افسوس ہے، ایس آئی یو ٹی

کراچی، سندھ انسٹیٹیوٹ آف یورولوجی اینڈ ٹرانسپلانٹیشن(ایس آئی یو ٹی)، کراچی انسٹیٹیوٹ آف ہارٹ ڈیزیززکے ڈاکٹر فرقان الحق کی کورونا کی وجہ سے 3مئی کوانتقال پربیحد افسوس کا اظہار کرتا ہے اور انکی مغفرت اور بلند درجات کے لئے دعا گو ہے۔

پریس، الیکٹرانک اور سوشل میڈیا میں ایس آئی یو ٹی کے متعلق کہا گیا ہے کہ ڈاکٹر صاحب علاج کی خاطرایس آئی یو ٹی بھی تشریف لائے تھے۔

ایس آئی یو ٹی نے اس واقعے کے بارے میں اپنے طور پرمکمل تفتیش کی ہے۔ ڈاکٹر فرقان کے ایس آئی یو ٹی کی ایمرجینسی یا ایس آئی یو ٹی کی حنیفہ سلیمان داؤد اونکولوجی سینٹر کی کورونا کلینک اور ایمرجینسی میں کہیں بھی آنے کے شواہد نہیں ملے۔ اتوار کو موجود اسٹاف بشمول سینئر فیکلٹی کو ایسے کسی بھی مریض کے آنے کا کوئی علم نہیں۔ اس کے علاوہ ان جگہوں میں لگے سی سی ٹی وی کیمروں میں کہیں بھی ڈاکٹر فرقان کی موجودگی کے شواہد نہیں ہیں۔

ایس آئی یو ٹی ہفتے کے سات دن،چوبیس گھنٹے، 50بستروں پر مشتمل آئسولیشن وارڈ اور دس وینٹیلیٹرز پر مشتمل آئی سی یو کی خدمات فراہم کر رہا ہے اور آج تک 8ہزار دوسو سے زائد مریضوں کو اسکریننگ کی سہولت فراہم کی جا چکی ہیں۔

ہمارے لئے یہ بہت بڑا چیلنج ہے کیوں کہ ایس آئی یو ٹی ملک میں سب سے زیادہ تعداد میں کمزور قوت مدافعت رکھنے والے مریضوں کا علاج کرتاہے جس میں ٹرانسپلانٹ، ڈایالیسس اورکینسر کے مریض شامل ہیں۔جن کی تعداد 16ہزار سے زائد ہے اور ان کی کمزور قوت مدافعت کے باعث ایس آئی یو ٹی ان کی بھی کورونا وائرس کے حوالے سے دیکھ بھال کر رہا ہے۔

شہر میں وینٹیلیٹرز والے آئی سی ویو کی سہولیات اس ایمرجینسی حالات کا مقابلہ کرنے کے لئے ناکافی ہیں۔ اوریہ وقت کی ضرورت ہے کہٓ آئی سی یو کی سہولیات کی نشاندہی کر کے ان کو کووڈ ایمرجینسی میں استعمال کیا جائے۔ اس ضمن میں کریٹیکل کئیر سوسائٹی کی مشاورت و مدد سے ایک پلان ترتیب دیا جا سکتا ہے جس میں زیادہ تعداد میں آئی سی یوکے بستروں کوکورونا کے مریضوں کے لئے استعمال کیا جا سکتا ہے جس سے بہت سی قیمتی جانیں بچائی جا سکتی ہیں۔

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے