ہفتہ 14 ذوالحجہ 1442ﻫ - 24 جولائی 2021

شہادت امام علی علیہ السلام کے سالانہ جلوس کا اہتمام وفاقی و صوبائی ایس او پیز کے عین مطابق کیا گیا، ایم ڈبلیو ایم

دو سو سے زائد جلوس کے شرکاء کی گرفتاریاں ریاستی جبر ہے۔علامہ باقر عباس زیدی
جلوس سے واپسی شرکاء کو بلاجواز دفعہ 188اور دفعہ 144 کے تحت گرفتار کیا گیا۔رہنما ایم ڈبلیو ایم
عزاداروں کی گرفتاری سندھ حکومت کے یزیدی کردار کی عکاسی کرتاہے۔علامہ باقر عباس زیدی
ایس او پیز کے پابندی کے باوجود مجالس و جلوس ہائے عزاء میں رکاوٹ ڈالنے کی مذمت کرتے ہیں۔علی حسین نقوی
کراچی سمیت سندھ بھر میں بے گناہ عزاداروں کو رہاکیا جائے۔رہنما ایم ڈبلیو ایم
گرفتار عزاداروں کو فوری رہا کر کے مقدمات واپس لیے جائیں۔مجلس وحدت مسلمین

کراچی، دوسوسے زائد جلوس کے شرکاء کی گرفتاریاں ریاستی جبر ہے۔ ملت تشیع باشعور انسانی اقدار کو ملحوظ رکھتے ہوئے سماجی ہم آہنگی میں یقین رکھتی اور اسی نصب العین پر کرونا کی عالمی وبا کے منظرنامے میں عدالتی و حکومتی کی پاسداری یقینی بناتے ہوئے شہادت امام علی علیہ السلام کے سالانہ جلوس کا اہتمام وفاقی و صوبائی ایس او پیز کے عین مطابق کیا گیا۔ اس کے باوجود جلوس سے واپسی شرکاء کو بلاجواز دفعہ 188اور دفعہ 144 کے تحت کیا جانا سندھ حکومت کے یزیدی کردار کی عکاسی کرتاہے۔ ان خیالات کا اظہار مجلس وحدت مسلمین کے صوبائی سیکرٹری جنرل علامہ باقر عباس زیدی و صوبائی ڈپٹی سیکرٹری جنرل علی حسین نقوی نے وحدت ہاوس سے جاری اپنے مذمتی بیان میں کیا رہنماوں کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت انتظامیہ نے یوم علی ع کے جلوسوں میں رکاوٹ بن کر یزیدی کر دار ادا کیاہے شہر قائد میں دو سو سے زائد عزاداروں کی جلوس سے واپسی پر گرفتاری قابل مذمت ہے کراچی سمیت سندھ بھر میں ایس او پیز کے پابندی کے باوجود مجالس و جلوس ہائے عزاء میں رکاوٹ ڈالنے کی مذمت کرتے ہیں عزاداری کے پروگرامات ہمارا قانونی و آئینی حق ہے،وزیرا علی سندھ و حکومت شہر میں فرقہ وارانہ تصادم کرانا چاہتے ہیں یوم علی ع کے جلوس ایس او پیز کے تحت نکالے گئے ہیں پابندی نہیں لگائی جا سکتی،مرکزی یوم علی کے جلوس سے واپسی پر گھر جاتے ہوئے عزاداروں کو دھوکے سے گرفتار کیا گیا،انہوں نے کہا کہ ملک وقوم کی سلامتی دانشمندانہ فیصلوں کا تقاضہ کرتی ہے ملک میں بسنے والے آٹھ کروڑ تشیع کے مذہبی جذبات کو مجروح کیا گیا ملت تشیع ایک پُرامن قوم ہے اور قانون کی پاسداری کو فرض سمجھتی ہے صدر اور وزیر اعظم سے ملاقات میں یوم علی ع کے پروگراموں کے انعقاد کی تائید کی گئی تھی عزاداری کے پروگراموں کے حکومتی ایس اوپیز کی پاسداری کرتے ہوئے منایا گیا رہنماوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ گرفتار عزاداروں کو رہا کرے سندھ حکومت عزاداروں کو ہراساں کرکے کی یزیدی سلوک کررہی،گرفتار عزاداروں کو فوری رہا کر کے مقدمات واپس لیے جائیں کراچی سمیت سندھ بھر میں بے گناہ عزاداروں رہا نہیں کیا گیا تو پوری شیعہ قوم وزیر اعلی ہاوس کا گھیراو کریں گی۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے