اتوار 4 شوال 1442ﻫ - 16 مئی 2021

امریکی تاریخ کا سب بڑا امدادی اقتصادی بل منظور: سینیٹ سے منظوری کا امکان نہیں

واشنگٹن ( نیوز ڈیسک)ریکی ایوان نمائندگان ( House of Representatives )نے سپیکر نینسی پیلوسی کا پیش کردہ 3 ٹریلین ڈالرز کا کورونا وائرس ریلیف پیکج 208-199 سے منظور کرلیا ہے.اس بل کو ہیروز ایکٹ کا نام دیا گیا ہے. تاہم سینٹ میں اس بل کی ناکامی کا امکان روشن ہے کیونکہ ریپبلیکنز اسے مسترد کرچکے ہیں اور سینٹ میں انکی اکثریت ہے کچھ ڈیموکریٹ اراکین کانگریس نے بھی ہیروز ایکٹ کی مخالفت کی ہے.واضح رہے کہ گزشتہ اقتصادی بل کے ذریعے کروڑوں امریکنز کو 1200 یا 2400 ڈالرز کی ادائیگی کی گئی تھی.اسے امریکی تاریخ کا سب سے بڑا Stimulus پیکج کہا جاتا ہے.جبکہ موجودہ پیکج کی مالیت سابقہ سے ایک ٹریلین زیادہ ہے.اس ایکٹ کے تحت بیشتر امریکنز کو 600 ڈالرز فی کس ھفتہ وار دینے کی سفارش کی گئی ہے اور اگر یہ بل قانونی شکل اختیار کرتا ہے تو ( جس کا امکان نہ ہونے کے برابر ہے)600 ڈالرز ہفتہ وار ادائیگی جنوری 2021 تک کی جائے گی.بل میں ریاستی حکومتوں کے لئے ایک ٹریلین ڈالر رکھے گئے ہیں.گھروں کے مالکان اور کرایہ داروں کے لیے 75 بلین ڈالرز مختص کرنے کی تجویز دی گئی ہے.مارچ سے اب تک ہاؤس کے ممبران تیسری بار ووٹنگ کے لئے اکھٹے ہوئے.نینسی پیلوسی کے بل کی خاص بات یہ تھی کہ 14 اراکین کانگریس نے اسکی مخالفت کی.

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے