پیر 30 شعبان 1442ﻫ - 12 اپریل 2021

امریکی سرمایہ کاری سے دنیا بھر میں سب سے موثر ویکسئین کی تیاری اہم مرحلہ میں

واشنگٹن ( خصوصی رپورٹ)آکسفورڈ یونیورسٹی میں کورونا وائرس کے خلاف ویکسئین کی انسانوں پر آزمائش انتہائی اہم مراحل میں داخل ہوگئی ہے.امریکہ نے ویکسیئن پر ایک بلین ڈالر کا جوا کھیلا ہے. گزشتہ دنوں یو ایس ڈیپارٹمنٹ آف ہیلتھ اینڈ ہیومن سروسز نے آکسفورڈ یونیورسٹی کی ویکسئین پر ایک ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کا اعلان کیا تھا. اسی دوران یونیورسٹی کی طرف سے کہا گیا ہے کہ انسانی ٹرائل کے اہم مرحلے میں ٹیسٹنگ کے لئے دس ہزار سے زائد رضا کار اپنے ناموں کا اندراج کراچکے ہیں.جن میں 5 سے 12 سال کے بچے اور 70 سال سے زیادہ عمر کے بزرگ شامل ہیں.آکسفوڈ ٹیم لیڈر اینڈریو پولارڈ نے کہا کہ مختلف ایج گروپ کے لوگوں کے اندراج کا مقصد ھم یہ دیکھنا چاہتے کہ مختلف عمر کے لوگوں میں ٹرائل کے نتائج کیسے ہونگے. انہوں نے کہا کہ عام طور سے بڑی عمر کے لوگوں کی مدافعاتی قوت کم ہوتی ہے اسلیے 70 سال سے زائد افراد کو بھی ٹرائلز میں شامل کیا گیا ہے.برطانیہ میں قائم عظیم الشان فارماسوٹیکل کمپنی AstraZeneka آکسفورڈ یونیورسٹی کے جینر انسٹی ٹیوٹ کے اشتراک سے ویکسئین تیار کررہی ہے انہیں امریکہ کی طرف سے 1.2 بلین ڈالرز ملے ہیں.وہ اب تک منظور نہ ہونے والی ویکسئین کے 300 ملین ڈوز تیار کرنے کا منصوبہ رکھتے ہیں جو اس سال موسم خزاں تک ممکن ہے.اسٹرازینیکا( AstraZeneka) کے سی ای اوپاسکل سورئیوٹ ( Pascal Soiot) نے بتایا کہ تجرباتی AZD1222 ویکسئین دنیا بھر میں تیار کی کاجانے والی دیگر درجنوں ویکسئین کے مقابلہ میں کہیں زیادہ امید افزا ظاہر ہورہی ہے.انہوں نے کہا کہ ہم یقین سے کہہ سکتے ہیں کہ ہماری ویکسئین بہترین نتائج دے گی اور انسانیت کو اس سے بہت فائدہ ہوگا.انہوں نے کہا کہ ناکامی کا بھی خدشہ ہے لیکن ہم پُرامید ہیں کہ ویکسئین کامیاب ہوگی قابل ذکر بات یہ ہے کہ ٹرمپ ایڈمنسٹریشن کا کہنا ہے ھم جوا لگانے جارہے ہیں. پاسکل سورئیوٹ نے کہا کہ اگر ابھی سے مینو فیکچرنگ شروع کردی تو ستمبر اکتوبر تک ویکسئین مریضوں کے لئے تیار ہوگی.انہوں نے کہا کہ انکی کمپنی 2021 تک ایک ارب ڈوز تیار کرلے گی.برطانوی فارما سوئیٹکل کمپنی میں امریکی سرمایہ کاری وائیٹ ہاؤس کے کورونا وائرس کی روک تھام کے لئے پروگرام ( Operation Wrap Speed) کے سلسلے میں ہے تاکہ مناسب ویکسئین کی تیاری عمل میں آسکے اور امریکی شہری اور دیگر لوگوں کو اس کا فائدہ ھو.انگلینڈ میں ویکسئین کے لئے کی جانے والی سرمایہ کاری اب تک اس نوعیت کی سب سے بڑی سرمایہ کاری ہے.پاسکل سورئیوٹ نے کہا کہ میں نے کبھی کسی چیز میں اس قدر تیزی سے پیش رفت نہیں دیکھی مگر امریکہ کی وجہ سے ہمیں تیزی سے کام کرنا پڑا واشنگٹن چاہتا ہے اسکے لوگوں کے لئے ویکسئین جلد تیار ہو.آکسفورڈ ٹیم کے ٹرائلز کا اہم مرحلہ ہیلتھ ورکرز کو ٹیسٹنگ میں شامل کرنا ہے.اینڈریو پولارڈ نے کہا کہ ہم ایسے افراد چاہتے ہیں جو COVID-19 سے زیادہ متاثر ہیں اس سے ہمیں معلوم ہوسکے گا کہ ویکسئین کس قدر موثر ہے

یہ بھی دیکھیں

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کینسر کے مریضوں کو مفت ادویات کی فراہمی کیلئے فنڈز کے اجراء کی منظوری دے دی

لاہور: وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار نے کینسر کے مریضوں کو مفت ادویات کی فراہمی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے