منگل 6 شوال 1442ﻫ - 18 مئی 2021

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب کا کہنا ہے کہ ابھی تک کسی بھی سرکاری اسپتال میں جگہ ختم ہونے کی کوئی شکایت نہیں ملی ہے۔

ترجمان سندھ حکومت مرتضیٰ وہاب کا کہنا ہے کہ ابھی تک کسی بھی سرکاری اسپتال میں جگہ ختم ہونے کی کوئی شکایت نہیں ملی ہے۔

تفصیلات کے مطابق سندھ اسمبلی میں صوبائی وزرا ناصرحسین شاہ اور ترجمان سندھ حکومت بیرسٹر مرتضی وہاب نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ سندھ کے اسپتالوں میں جگہ نہیں سول اسپتال کراچی ، اوجھا کیمپس اور لیاری جنرل اسپتال میں اب بھی گنجائش ہے، کراچی سمیت صوبے میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد تیزی سےبڑھ رہی ہے،کورونا کیسز میں تیزی سے اضافہ خطرناک ثابت ہوسکتا ہے۔

اس موقع پر صوبائی وزیر ناصر حسین نے کہا کہ وزیراعظم نے ایکسپورٹ کی اجازت دی لیکن رپورٹ میں ان کا کہیں ذکر نہیں، آج حکومت نے سب ٹھیک کرلیا تو پھر چینی کی قیمت 80 روپے کلو سے زیادہ کیوں ہے، سندھ حکومت کے خلاف باتیں کی جا رہی ہیں اور سبسڈی کو اومنی گروپ سے ملایا جا رہا ہے، جن ملوں کی بات کی جا رہی ہے انہیں 15.4 فیصد سبڈی دی گئی باقی سبسڈی دیگر ملوں کو دی گئی۔

مرتضی وہاب نے کہا کہ سندھ میں چینی پر سبسڈی کی وجہ گنے کی فصل کی زیادہ پیداوار ہے، سندھ حکومت نے جب سبسڈی دی تو بلا امتیاز دی، سندھ حکومت کی دی جانیوالی سبسڈی میں غیر جانبداری تھی، گزشتہ تین سال میں سندھ حکومت نے شوگر ملوں کو کوئی سبسڈی نہیں دی، اومنی گروپ کی سبسڈی کو پہاڑ بنا کر پیش کیا جا رہا ہے، شوگر کمیشن کی رپورٹ میں لکھا ہے کہ ایکسپورٹ کی وجہ سے قیمتوں میں اضافہ ہوا، ای سی سی نے چینی کو برآمد کرنے کی اجازت دی۔

اس موقع پر وزیر اطلاعات ناصر شاہ کا کہنا تھا کہ سندھ اسمبلی اجلاس کےحوالے سے پارلیمانی جماعتوں کےساتھ قواعد و ضوابط پر اتفاق ہواہے،جبکہ سندھ میں 31 مئی تک لاک ڈاون پابندیوں کا اطلاق جاری رہے گا۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے