جمعرات 3 رمضان 1442ﻫ - 15 اپریل 2021

جاسوسی کے الزام میں پکڑا جانے والا ”پاکستانی کبوتر“ معصوم نکلنے کے بعد رہا

جاسوسی کے الزام میں پکڑا جانے والا ”پاکستانی کبوتر“ معصوم نکلنے کے بعد رہا

مقبوضہ کشمیر میں قابض بھارتی انتظامیہ نے چند روز قبل ضلع کٹھوعہ میں ورکنگ باﺅنڈری پر پکڑے جانے والے اس کبوتر کو رہا کر دیا ہے جسے اس نے مبینہ طور پر ”پاکستانی جاسوس“ قرار دیا تھا۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق پکڑے گئے کبوتر کے پرپینٹ کیے ہوئے تھے اور اس کے ایک پیر میں رنگ باندھی ہوئی تھی جس پر کچھ اعداد لکھے ہوئے تھے۔ کٹھوعہ کے ایس ایس پی ڈاکٹر شیلندر کمار مشرا نے ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو بتایا کہ پولیس کو مقامی لوگوں کی طرف سے پکڑے گئے کبوترمیں کوئی مشکوک چیز نظر نہیں آئی جبکہ ایک ویٹرنری ڈاکٹرنے بھی کبوتر کے معائنے کے بعد اسے کلیئر قرار دیا جس کے بعد اسے آزاد کر دیا گیا۔ یا د رہے کہ سیالکوٹ سے تعلق رکھنے والے حبیب اللہ نامی ایک شخص نے مذکورہ کبوتر کا مالک ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے بھارتی حکومت سے اپیل کی تھی کہ وہ کبوتر کو رہا کرے۔انہوںنے ایک ویڈیو پیغام میں کہاتھا کہ کبوتر کے پیر کے ساتھ بندھی رنگ پر جو اعداد لکھے ہوئے ہیں وہ کوئی کوڈ پیغام نہیں ہے بلکہ میرا فون نمبر ہے۔

یہ بھی دیکھیں

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار کا پیغام۔ 

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے