بدھ 25 ذوالحجہ 1442ﻫ - 4 اگست 2021

اسلام آباد.. معاشرے کا ایک بڑا المیہ جرم ایک بار پھر جیت گیا.

اسلام آباد کے مضافاتی ایریا تھانہ گولڑہ کی حدود ڈھوک راجہ محبوب میں ایک بوڑھے شخص جس کا نام محمد نواز والے کرم داد اس کی بیٹی جس کی عمر 14 سے 15 سال تھی اس کو ظالم درندے اٹھا کر لے گئے.بوڑھا باپ اپنی بیٹی کو قرآن حفظ کروانے کے لیے ڈھوک راجہ محبوب سے آٹھ کلومیٹر کے فاصلے پر ڈھوک جو د ا مدرسے میں داخل کروایا.وہاں پر اس کی دوستی ایک نگہت نامی لڑکی سے ہوئی جو کہ ٹھٹہ خلیل ٹیکسلا کی رہائشی ہے.اور ایک ماہ بعد محمد نواز کی بیٹی اچانک سے غائب ہوگئی.اس کے بعد اس کی بیٹی کا آج دن تک پتہ نہ چل سکا بوڑھے شخص نے ہر دروازے پر دستک دی.مگر کوئی شنوائی نہ ہوئی پولیس والوں نے ایف آئی آر درج کرلی.مگر مختلف حیلوں بہانوں سے بوڑھے شخص کو تڑخایا جا رہا ہے.آج یہ بوڑھا شخص غم کی تصویر بن کے رہ گیا.ہمارے معاشرے کا سب سے بڑا المیہ یہ ہے کہ غریب کا کوئی پرسان حال نہیں.اس سازش کے پیچھے ایسا کونسا مافیا ہے جس کی وجہ سے پولیس نے ابھی تک معصوم بچی ڈھونڈنے کی بجائے بچی کے گھر والوں کو مختلف حیلوں بہانوں سے ٹرخانے کی کوشیش کی جا رہی ہے.ذرائع نے ایک بڑا انکشاف کیا ہے تھانہ گولڑہ کی حدود اور خاص کر کے تھانہ ترنول کی حدود میں کرمنل مافیا نے اپنے پنجے گاڑ رکھے ہیں.کیوں کہ مافیا کو عیاشی کرنے کے لیے پولیس کی پوری طرح حمایت حاصل ہے.مافیا معاشرے کے لیے ناسور بنتا جا رہا ہے آج ایک بوڑھا شخص اپنی بیٹی کے لئے دربدر ٹھوکریں کھا رہا ہے.حکومت وقت کے نمائندے ہمیں صرف فیس بک اور ٹوئٹر پر سب اچھا کرتے نظر آتے ہیں.علاقہ کے سفید پوش لوگ جو خود کو ہر جرگے میں تیس مار خان شو کرتے ہیں مگر اپنے علاقے کے مسائل پر بات کرتے ہوئے انھیں تکلیف ہوتی ہے.بوڑھے شخص کا آج ہر طبقے سے حکومت سے ہر شخص سے سوال ہے.کہ خدارا مجھے اتنا تو پتہ چل جائے کہ وہ زندہ ہے یا اس دنیا میں نہیں.تاکہ میں اپنے آپ کو سمجھا سکوں بوڑھے شخص کو مختلف طریقوں سے ڈرا جا رہا ہے.کہ اس کے پیچھے ہٹ جاؤں بوڑھے شخص نے انکشاف کیا ہے کہ اگر مجھے کچھ بھی ہو جاتا ہے تو اس کی ذمہ دار سے پولیس ہوگی.

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے