پیر 30 شعبان 1442ﻫ - 12 اپریل 2021

نیویارک پولیس چیف مظاہرین سے اظہار یکجہتی کے لیے گھٹنے کے بل بیٹھ گئے

نیویارک ( پرو اردو) نیویارک پولیس ڈیپارٹمنٹ کے اعلی ترین عہدےدار مظاہرین کے ساتھ اظہار یکجہتی کے طور پر گھٹنوں کے بل بیٹھ گئے اور سیاہ فام نوجوان جارج فلائیڈ کے قتل کی بھرپور انداز میں مذمت کرتے ہوئے مظاہرین سے پرامن رہنے کی اپیل کی ہے اور کہا ہے کہ وہ توڑ پھوڑ اور لوٹ مار سے گریز کریں تاکہ پر امن مظاہرے درہم برہم نہ ہوجائیں.چیف آف ڈیپارٹمنٹ ٹیرنس موناہن نے ڈاؤن ٹاؤن مین ہٹن میں سینکڑوں افراد کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پُرتشدد مظاہروں کا سلسلہ ختم ہونا ضروری ہے.میڈیا رپورٹس کے مطابق پروفیشنل لٹیروں نے مظاہروں کا فائدہ اٹھاتے ہوئے نیویارک سٹی خصوصا مین ہٹن میں مشہور برینڈ اور اداروں کے سٹورز توڑ کر دانستا” لوٹ مار کی پولیس نے متعدد لٹیروں کو حراست میں لے لیا ہے.پولیس چیف کا کہنا تھا کہ ہم سب جانتے ہیں جارج فلائیڈ کے مبینہ قاتل ڈیرک شاوِن سمیت دیگر پولیس افسروں نے غلط اقدام کیا اور وہ گرفتار بھی کرلئے گیے ہیں.انہوں نے نیویارک پولیس کے افسروں اور اہلکاروں سے اظہار یکجہتی کرتے ہوئے کہا کہ NYPD کا ایک افسر یا اہلکار بھی منی سوٹا کے واقعہ کو جائز نہیں سمجھتا. لاؤڈ سپیکر پر خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم ایک دوسرے سے لڑ نہیں سکتے ہم سب نے یہاں ایک ساتھ رہنا ہے.گھٹنے کے بل بیٹھنے کے بعد محکمہ پولیس کے اعلی عہدیدار مظاہرے کے منتظم اعلی سے گلے بھی ملے.نیویارک سٹی میں لگاتار چھے دن مظاہرے ہوئے جو بدستور جاری ہیں.

یہ بھی دیکھیں

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار کا پیغام۔ 

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے