جمعہ 27 ذوالحجہ 1442ﻫ - 6 اگست 2021

ڈاکٹروں اور ہیلتھ کیئر ورکرز کی ضروریات پوری کرنے کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس

وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت کورونا وائرس کے خلاف نبرد آزما ملکی ڈاکٹروں اور ہیلتھ کیئر ورکرز کی ضروریات پوری کرنے کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس

اجلاس میں وزیرِ اطلاعات سینٹر شبلی فراز، وزیر برائے منصوبہ بندی اسد عمر، معاون خصوصی ڈاکٹر ثانیہ نشتر، معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا، معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل، وزیرِ اعظم کے فوکل پرسن برائے کورونا ڈاکٹر فیصل سلطان اور دیگر سینئر افسران شریک۔ وزیرِ صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد اور وزیر صحت خیبر پختونخواہ تیمور سلیم جھگڑا بھی ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شریک

اجلاس میں کورونا کے خلاف نبردآزما ملکی ڈاکٹروں، پیرامیڈکس اور ہیلتھ کیئر ورکرز کی مختلف ضروریات کو پورا کرنے بشمول بشمول حفاظتی کٹس اور آلات کی فراہمی کے حوالے سے وفاقی و صوبائی حکومتوں کی جانب سے اٹھائے جانے والے اقدامات کا تفصیلی طور پر جائزہ لیا گیا۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیرِ اعظم نے کورونا وائرس کے خلاف نبرد آزما ڈاکٹروں اور ہیلتھ کیئر سٹاف کے جذبے کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کہ کورونا جیسی عالمی وبا سے قوم کو محفوظ رکھنے میں ڈاکٹر ز اور ہیلتھ کیئر سٹاف ہمارا اول دستہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ پوری قوم ان مسیحاؤں کو خراج تحسین پیش کرتی ہے جو قوم کو اس وباء سے محفوظ رکھنے کے لئے برسرِ پیکار ہیں۔ وزیرِ اعظم نے کہا کہ ڈاکٹروں اور ہیلتھ کیئر سٹاف کی تمام ضروریات پوری کرنا حکومت کی اولین ترجیح ہے اور اس ضمن میں کوئی کسر روا نہیں رکھی جائے گی۔

اجلاس میں کورونا وائرس کی صورتحال اور ملک میں موجود ہیلتھ کئیر کی سہولیات کا بھی جائزہ لیا گیا۔

اجلا س کو بتایا گیا کہ جہاں ایک طرف ٹیسٹنگ، ٹریکنگ اور کوارنٹین کی موثر حکمت عملی کی بدولت کورونا کے تشخیص اور متاثرہ افراد کی شناخت کے حوالے سے مثبت نتائج سامنے آئے ہیں وہاں ریسوس منیجمنٹ سسٹم کی بدولت ملک میں کورونا کے لئے مخصوص مراکز، وینٹی لیٹرز و دیگر سہولیات کی فراہمی کے حوالے سے موجود وسائل کا موثر اور بہترین استعمال یقینی بنانے میں بھی خاطر خواہ مدد ملی ہے۔

وزیرِ اعظم نے ہدایت کی صوبائی حکومتیں عوام کو کورونا کے حوالے سے ترتیب دیے جانے والے ایس او پیز پر عملد رآمد کی ترغیب دینے کے لئے متحرک کردار ادا کریں تاکہ عوام از خود کورونا سے بچاؤ کے لئے تجویز کردہ حفاظتی اقدامات اختیار کریں جس سے نہ صرف صحت کی موجود سہولیات پر کم بوجھ پڑے گا بلکہ وائرس کی موثر روک تھام کو بھی یقینی بنایا جاسکے گا۔

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے