جمعرات 15 ربیع الاول 1443ﻫ - 21 اکتوبر 2021

فیشن میگزین ہارپر بازار نے سیاہ فام خاتون کو ایڈیٹر ان چیف کے عہدے پر تعینات کردیا

ملٹی نیشنل معروف فیشن میگزین ہارپر بازار نے اپنی 153 سالہ تاریخ میں پہلی بار سیاہ فام خاتون کو ایڈیٹر ان چیف کے عہدے پر تعینات کردیا

1867میں ہارپر بازار امریکہ سے شروع ہونے والے ملٹی نیشنل فیشن میگزین کے اس وقت برطانیہ سمیت دیگر ممالک سے الگ الگ ایڈیشن نکلتے ہیں جب کہ اس میگزین کو انگریزی اور عربی زبان کے علاوہ دیگر زبانوں میں بھی شائع کیا جاتا ہے-

یہ میگزین ہرسٹ کمیونی کیشن کمپنی کی ملکیت ہے جو کہ متعدد اخبارات میگزین اور ٹی وی چینلز کی شریک کمپنی ہے اس کمپنی کے والٹ ڈزنی سمیت اسپورٹس کے معروف چینل ای ایس پی این میں بھی شیئر ہیں۔

ہارپر بازار میگزین کی کمپنی کے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر نئی ایڈیٹر ان چیف کا ویڈیو پیغام جاری کیا گیا، جس میں سیاہ فام ایڈیٹر نے اپنا تعارف بھی کرایا اور اپنی خوشی کا اظہار کیا-
ہارپر بازار کے مطابق سمیرا نصر آئندہ ماہ 6 جولائی سے اپنی ذمہ داریاں سنبھالیں گی۔

دوسری جانب سمیرا نصر نے بھی اپنے انسٹا گرام اکاؤنٹ پر یہ ویڈیو پیغام شئیر کیا-

ہارپر بازار نے لبنانی نژاد امریکی خاتون سمیرا نصر کو اعلی ترین عہدے پر تعینات کیا ہے جو کہ اس سے قبل بھی معروف فیشن میگزینز کے اعلی عہدوں پر تعینات رہ چکی ہیں تاہم وہ پہلی بار اعلی ترین عہدے پر خدمات سر انجام دیں گی ان کی ہارپر بازار میں ایڈیٹر ان چیف کی تقرری پر کئی اہم شخصیات نے خوشی کا اظہار کرتے ہوئے انہیں مبارک باد بھی دی۔

سمیرا نصر ہارپر بازار کی ایڈیٹر ان چیف مقرر ہونے سے قبل معروف میگزین وینٹی فیئر میں فیشن ڈائریکٹر کی ذمہ داریاں نبھا رہی تھیں جب کہ وہ ان اسٹائل ایلے اور ووگ سمیت دیگر فیشن میگزینز میں بھی فیشن و کلچر ایڈیٹر کے اعلی عہدوں پر خدمات سر انجام دے چکی ہیں۔
سمیرا نصر کی اعلی ترین عہدے پرتعیناتی ایک ایسے وقت میں ہوئی ہے جب کہ امریکا سمیت دنیا بھر میں نسلی تعصب کے خلاف مظاہرے جاری ہیں اور دنیا بھرمیں لوگ سیاہ فام افراد کے ساتھ اظہار یکجہتی کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ دنیا بھر میں نسلی تعصب کے خلاف مظاہرہ گزشتہ ماہ 25 مئی کو اس وقت شروع ہوئے جب کہ امریکی ریاست مینیسوٹا کے شہر مینیا ایپلس میں پولیس کے ہاتھوں سیاہ فام جارج فلائیڈ کی ہلاکت ہوئی-

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے