منگل 24 ذوالحجہ 1442ﻫ - 3 اگست 2021

پی آئی اے انتظامیہ نے ملازمین کو تنخواہوں میں عارضی کمی کے حوالے سے خط لکھ دیا۔

ذرائع کے مطابق سی ای او پی آئی اے ایئر وائس مارشل ارشد علی نے اپنے مراسلے میں لکھا ہے کہ ایئرلائن کی صنعت کو عالمی سطح پر 3 ارب 4 کروڑ روپے کا نقصان اٹھانا پڑا ہے، قومی کیریئر کو کورونا وائرس کی صورتحال کی وجہ سے ہر ماہ تقریباً 6، 6 ارب روپے کا نقصان اٹھانا پڑتا ہے، پی آئی اے نے ملازمین کی تنخواہوں میں عارضی کمی کا اعلان کیا ہے، ملک میں فلائٹ آپریشن دوبارہ شروع ہونے کے ساتھ ہی اصل تنخواہ بحال کر دی جائے گی۔

جن ملازمین کی سالانہ مجموعی تنخواہ ایک لاکھ سے زائد ہے ان کی تنخواہوں میں 10 فیصد کمی کر دی گئی ہے، جن کی تنخواہ 3 لاکھ سے زیادہ ہے انہیں تنخواہ میں 15 فیصد تک کٹوتی کا سامنا کرنا پڑے گا، تنخواہ میں کٹوتی گریڈ 1 تا 4 کے ملازمین پر لاگو نہیں ہوگی، پی آئی اے کے اعلیٰ عہدیداروں نے اپنی تنخواہوں میں رضاکارانہ کٹوتی کا اعلان کیا ہے۔ ابتدائی طور پر پی آئی اے کے چیف آپریٹنگ آفیسر (سی ای او) ارشد ملک نے اپنی تنخواہ میں 20 فیصد کٹوتی کا اعلان کیا ہے

یہ بھی دیکھیں

حکومت کی جانب سے تعلیمی اداروں کو بند کرنے کا معاملہ۔ 

حکومت کی جانب سے تعلیمی اداروں کو بند کرنے کا معاملہ۔ آل پاکستان پرائیویٹ اسکولز …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے