منگل 1 رمضان 1442ﻫ - 13 اپریل 2021

تاجروں کے لیے خوشخبری آگئی : بغیر شناختی کارڈ خریداری کی حد بڑھا کر ایک لاکھ تک کرنے کی تجویز

اسلام آباد:تاجروں کے لیے خوشخبری آگئی, بغیر شناختی کارڈ خریداری کی حد بڑھا کر ایک لاکھ تک کرنے کی تجویز،اطلاعات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے عوام کی سہولت کے لیے بغیر شناختی کارڈ خریداری کی حد بڑھا کر ایک لاکھ تک کرنے کی تجویز دی ہے۔

حکومت نے ٹیکس بیس کو بڑھانے کے لیے فنانس ایکٹ 2019 میں شناختی کارڈ کی شرط متعارف کروائی گئی تھی تاکہ ان افراد کو جو ٹیکس نیٹ میں شامل نہیں، انہیں ٹیکس کے دائرہ کار میں لایا جائے۔
حکومت نے شناختی کارڈ کے بغیر خریداری کی حد اب 50ہزار سے بڑھا کر ایک لاکھ روپے کرنے کی تجویز دی ہے۔

واضح رہے کہ 50ہزار کی شرط کے خلاف تاجر برادری نے ملک بھر میں شدید احتجاج کیا گیا تھا اور آل پاکستان انجمن تاجران (اے پی اے ٹی) نے ہڑتال کی کال دی تھی۔

گزشتہ سال تاجروں نے اس شرط کو ختم کرنے کا مطالبہ کیا تھا اور اس سلسلے میں احتجاج بھی کیا گیا تھا لیکن حکومت کے ساتھ کامیابی مذاکرات کے نتیجے میں شناختی کارڈ کی شرط کو تین ماہ کے لیے موخر کردیا گیا تھا۔

خریداری کے وقت قومی شناختی کارڈ دکھانے کی شرط تاجروں کی سہولت کے لیے جولائی 2019 میں واپس لے لی گئی تھی لیکن یکم فروری 2020 سے دوبارہ نافذ کردی گئی تھی۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے