جمعرات 3 رمضان 1442ﻫ - 15 اپریل 2021

وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر نے پیر کو اعلان کیا کہ دیامر بھاشا ڈیم 2027 تک مکمل ہوجائے گا۔

وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر نے پیر کو اعلان کیا کہ دیامر بھاشا ڈیم 2027 تک مکمل ہوجائے گا۔

وفاقی وزیر منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر نے پیر کو اعلان کیا کہ دیامر بھاشا ڈیم 2027 تک مکمل ہوجائے گا۔ ہم اس سال تین ہائیڈل پروجیکٹس پر کام شروع کردیں گے۔ واٹر اینڈ پاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (واپڈا) کی گنجائش میں 80 فیصد تک بہتری لانا۔ دیامر بھاشا ڈیم کی بحالی کے عمل پر پہلے ہی 30 ارب روپے خرچ ہوچکے ہیں ، "اسد عمر نے بجٹ اجلاس کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کہا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت بلوچستان کے علاقوں کو پانی کی فراہمی میں بہتری لانے کے لئے بھی اقدامات کر رہی ہے اور اس سے قبل ہی نولونگ ڈیم پر ترقیاتی کاموں کی منظوری دے دی گئی ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ سندھ بیراج منصوبے کی فزیبلٹی تیار کرنے کے لئے بھی رقم مختص کی گئی ہے۔

اسد عمر نے بتایا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری (سی پی ای سی) کے تحت 2000 میگاواٹ بجلی کے منصوبے شروع کیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم سی پی ای سی کے تحت تین خصوصی اقتصادی زون قائم کریں گے۔

یہاں یہ بتانا ضروری ہے کہ وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال کے لئے ڈیموں اور پن بجلی منصوبوں کے لئے 177.512 بلین روپے مختص کرنے کا منصوبہ بنایا ہے کیونکہ اس کا مقصد ملک میں پانی کے تحفظ کے منصوبوں پر اخراجات کو ترجیح دینا ہے۔ بجٹ کی سفارشات کے مطابق قومی خزانے سے منصوبوں کے لئے 164 ارب روپے استعمال کیے جائیں گے جبکہ غیر ملکی فنڈنگ ​​کے وسائل سے 13.50 ارب روپے رکھے جائیں گے۔

دریائے سندھ میں داسو ہائیڈرو پاور منصوبے کی تعمیر کے لئے 80 ارب روپے مختص کرنے کی سفارش کی گئی۔

ورلڈ بینک نے 2017 میں داسو ہائیڈرو پاور پروجیکٹ کی تعمیر کے لئے بھی قرض کی منظوری دی تھی اور اس منصوبے کے لئے زمین کے حصول میں رکاوٹیں پیدا ہونے کے بعد اس منصوبے میں تاخیر ہوئی تھی۔

حکومت نے دیامر بھاشا ڈیم کی تعمیر کے لئے 21 ارب روپے مختص کرنے کی بھی سفارش کی ہے جبکہ آئندہ مالی سال کے دوران نیلم جہلم ہائیڈرو پاور منصوبے کے لئے 14.7 ارب روپے مختص کرنے کا منصوبہ بنایا گیا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے