منگل 1 رمضان 1442ﻫ - 13 اپریل 2021

‏ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس کے تینوں ملزموں کو عمر قید کی سزا سنا دی گئی

تفصیلات کے مطابق خصوصی عدالت نے 21 مئی کو دلائل مکمل ہونے پر فیصلہ محفوظ کیا تھا،کیس میں تین ملزمان محسن علی،معظم علی اور خالد شمیم کو گرفتار کیا گیا تھا۔

‏ڈاکٹرعمران فاروق قتل کیس کے تینوں ملزموں کو عمر قید کی سزا سنا دی گئی

عمران فاروق قتل کیس کا ٹرائل 2015 میں اسلام آباد میں شروع ہوا،پانچ دسمبر 2015 کو ملزمان کیخلاف مقدمہ درج کیا گیا،2 مئی 2018 کو ملزمان پر فردِ جرم عائد کی گئی، ملزمان نے 7 جنوری 2016 کو مجسٹریٹ کے سامنے اقبال جرم کیا اور بعد میں منحرف ہو گئے۔

عمران فاروق قتل کیس میں بانی متحدہ،محمد انور، افتخار حسین اور کاشف کامران کو عدالت نے اشتہاری قرار دے رکھا ہے۔ایف آئی اے کوبرطانیہ سے شواہد حاصل کرنے میں 4 سال لگے تھے۔ برطانیہ نے ملزمان کو سزائے موت نہ دینے کی یقین دہانی پر پاکستان کو شواہد فراہم کئے تھے۔ایف آئی اے نے پاکستان اور برطانیہ سےکُل 29 گواہان کو عدالت پیش کیا تھا،ملزمان کا 5 بارجسمانی ریمانڈ لیا گیا۔

یاد رہے کہ ایم کیوایم رہنما عمران فاروق کو 16 ستمبر 2010 کو لندن میں قتل کیا گیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے