جمعرات 14 ذوالقعدہ 1442ﻫ - 24 جون 2021

روسی انٹیلی جنس نے طالبان کو امریکی اور برطانوی فوجیوں کو مارنے کیلئے پیسے دیئے

روسی انٹیلی جنس نے طالبان کو افغانستان میں امریکی اور برطانوی فوجیوں کو مارنےکیلئے پیسے دیئے
امریکی میڈیا نے دعویٰ کیا ہے کہ ایک یورپی انٹیلی جنس کے عہدیدار کے مطابق روسی انٹیلی جنس (جی آر یو) کے افسران نے حال ہی میں افغانستان میں طالبان عسکریت پسندوں کو امریکی اور برطانوی فوجیوں کو مارنے کیلئے پیسے دیئے۔ اس یورپی خفیہ ادارے کے عہدیدار کے مطابق یقین سے تو نہیں کہا جا سکتا مگر اس عمل کے نتیجے میں اتحادیوں کی ہلاکتیں بڑھیں ہیں۔
اس عہدیدار نے کہا ، "جی آر یو کا یہ ناقص طرز عمل چونکا دینے والا اور قابل مذمت ہے۔ ان کا حوصلہ حیرت زدہ ہے۔”
امریکی انٹیلی جنس نے کئی ماہ قبل یہ الزام عائد کیا تھا کہ روس کی جانب سے طالبان کو پیسے دیئے جا رہے ہیں۔
وائٹ ہاؤس کی پریس سکریٹری کیلیگ میکینی نے ہفتے کے روز ایک بیان میں کہا ہے کہ ٹرمپ اور نائب صدر مائیک پینس کو روسی انٹیلی جنس کے اس عمل کے بارے میں بریفنگ نہیں دی گئی۔ البتہ انہوں نے امریکی خفیہ ایجنسی کی اس بات سے انکار نہیں کیا کہ روس نے طالبان عسکریت پسندوں کو امریکی اور برطانوی فوج کو مارنے کیلئے نقد انعامات پیش کیے تھے۔
اسی معاملے پر ہفتے کے روز واشنگٹن ٹاؤن ہال میں گفتگو کرتے ہوئے سابق نائب صدر جوبائیڈن نے کہا کہ ڈونلڈ ٹرمپ کا صدر بننا پیوٹن کے لیے خاص تحفے جیسا ہے، انہوں نے کہا کہ یہ ہر امریکی کے ساتھ دھوکہ ہے خاص کر ان لوگوں کے ساتھ جن کا کوئی پیارا یا چاہنے والا افغانستان میں موجود ہے اور اگر وہ امریکی صدر ہوں تو ولادیمیر پیوٹن کے اس عمل کا واضح جواب دیں گے اور ڈٹ کا روس کا مقابلہ کیا جائے گا۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے