پیر 13 صفر 1443ﻫ - 20 ستمبر 2021

کیا یورپی یونین نے بارڈر دوبارہ کھلنے پر پاکستانیوں کے یورپ داخلے پر پابندی لگادی؟

یورپی یونین نے کورونا کے باعث بند کیے گئے اپنے بارڈر دوبارہ کھولنے کے حوالے سے 54 ممالک پر مشتمل ایک فہرست تیار کر لی ہے، یورپ کے بارڈر کھلنے کے بعد صرف انہی ممالک کے شہریوں کو داخلے کی اجازت دی جائے گی جن کے نام ان 54 ممالک کی فہرست میں شامل ہوں گے۔
حیران کن طور پر بھارت جو کہ دنیا میں کورونا وائرس سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک کی فہرست میں چوتھے نمبر پر ہے اس کا نام اس فہرست میں شامل ہے، اس وقت بھارت میں کورونا کے5 لاکھ 45 ہزار سے زائد کیسز سامنے آ چکے ہیں اور16 ہزار سے زائد اموات ہو چکی ہیں۔
یورپی یونین کے مطابق امریکا کورونا سے سب سے زیادہ اسی لیے متاثر ہوا کیونکہ اس نے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک کے شہریوں کو داخلے سے نہیں روکا۔ یورپی میڈیا کے مطابق 54 ممالک کی بنائی گئی اس فہرست پر یورپی یونین کے متعدد رہنما نا خوش ہیں اور ان کا اس لسٹ پر اتفاق نہیں ہو سکا۔
یورپی یونین میں شامل ممالک کے جولائی میں دوبارہ بارڈر کھولے جائیں گے۔
جن ممالک کے نام فہرست میں شامل ہیں ان میں البانیہ، الجیریا، انگولا، اندورا، آسٹریلیا، باہماس، بھوٹان، بوسنیا، ہرزیگوونیا، کینیڈا، چین، کوسٹا ریکا، کیوبا، عوامی جہموریہ کوریا، ڈومینیکا، مصر، جارجیا، گیوانا، بھارت، انڈونیشیا، جمیکا، جاپان، قازقستان، کوسوو، لبنان، موریشئس، موناکو، منگولیا، مونیٹاگرو، موروکو، موزمبیق، میانمار، نمیبیا، نیوزی لینڈ، نیکاراگوا، پلاؤ، پراگ، روانڈا، سینٹ لوشیا، سربیا، جنوبی کوریا، تاجسکتان، تھائی لینڈ، تونیسیا، ترکی، ترکمانستان، یوگنڈا، یوکرائن، ارگوائے، ازبکستان، ویٹی کن، وینزویلا، ویتنا، اور زیمبیا ہیں۔
پاکستانی اخبار ایکسپریس ٹریبیون نے یہ دعویٰ کیا کہ یورپی یونین نے بارڈر کھلنے پر پاکستانیوں کے داخلے پر پابندی لگادی ہے جبکہ اس خبر میں بھی کوئی صداقت نہیں ہے۔ اگر اس نقشہ کو دیکھیں تو اس نقشہ میں جو ممالک سبزرنگ میں ظاہر کئے گئے ہیں، انہیں یورپ میں داخلے کی اجازت ہوگی جبکہ ایسے ممالک جنہیں سرخ رنگ میں ظاہر کیا گیا ہے ان ممالک کے داخلے پر پابندی ہوگی ان ممالک میں امریکہ، روس ، برازیل شامل ہیں جبکہ پاکستان کا نام شامل نہیں۔
پاکستان کو گرے رنگ میں ظاہر کیا گیا جس کا مطلب یہ ہے کہ پاکستان کے بارے میں فیصلہ ہونا باقی ہے اور یورپ پاکستان میں کرونا کی صورتحال کا بغور جائزہ لے رہی ہے۔ گرے رنگ ظاہر کئے جانیوالے ممالک میں یورپی ممالک برطانیہ، جرمنی، اٹلی، فرانس وغیرہ بھی شامل ہیں، اسکے علاوہ وہ افریقی ممالک بھی شامل ہیں جن میں کرونا کیسز اکا دکا ہیں۔۔
سعودی عرب، ایران، عمان، اردن ، شام وغیرہ بھی اسی فہرست مٰن شامل ہیں
دوسری جانب ایک اور یورپی سفارتکار کے مطابق ایسی کو حتمی فہرست نہیں بلکہ ابھی صرف طریقہ کار وضع کیا گیا ہے۔ اس سفارتکار کے مطابق ان ممالک کو اجازت دی جائے گی جن میں ہر لاکھ افراد میں سے متاثرہ افراد کا تناسب کم ہوگا۔
مارچ کے مہینے میں جب یورپ میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد ایک دم سے بڑھی تھی تب امریکا نے بھی یورپ کے متعدد ممالک سے شہریوں کے داخلے پر پابندی لگا دی تھی، اب یہ فہرست بنانے کا مقصد پر امریکا پر غصہ نکالنا بھی ہو سکتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعلیٰ سندھ سیدمراد علی شاہ کا کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بیان۔ 

وزیراعلیٰ سندھ سیدمراد علی شاہ کا کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق بیان۔ گزشتہ 24 …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے