پیر 20 صفر 1443ﻫ - 27 ستمبر 2021

توشہ خانہ سے متعلق دائر ریفرنس کرمنل کیس ہے، آصف زرداری کو پیش تو ہونا پڑے گا۔ عدالت

اسلام آباد کی احتساب عدالت نے توشہ خانہ سے قیمتی گاڑیاں اور تحائف وصول کرنے سے متعلق دائر ریفرنس میں سابق صدر آصف علی زرداری کے وارنٹ گرفتاری جاری کردیئے

سابق وزیر اعظم نواز شریف کو اشتہاری قرار دینے کی کارروائی کا آغاز کردیا۔

نواز شریف برطانیہ میں موجود ہیں اس لیے دفتر خارجہ کے ذریعے وارنٹس بھیجے۔ نیب پراسیکیوٹر

کرمنل کیس ہے، آصف زرداری کو پیش تو ہونا پڑے گا۔ عدالت

کورونا کے دن ہیں اور آصف زرداری کی عمر زیادہ ہے۔ فاروق ایچ نائیک

ان کے آنے سے لوگ اکٹھے ہوں گے پھر رش ہوگا۔ وکیل

ان کی نمائندگی کے لیے میں یہاں عدالت میں موجود ہوں۔ وکیل

نواز شریف کی عدم پیشی پر اشتہار جاری کر رہے ہیں۔ جج اصغر علی

آصف علی زرداری کے وارنٹ بھی جاری کر دیتے ہیں۔ جج

میں لمبی تاریخ دے دیتا ہوں پھر آصف زرداری عدالت میں پیش ہو جائیں۔ جج

نواز شریف کے ناقابل ضمانت وارنٹس پر عمل درآمد نہ ہو سکا۔ عدالت

نواز شریف دانستہ طور پر عدالتی کارروائی کا حصہ نہیں بن رہے۔ عدالت

جج محمد اصغر علی نے سابق وزیراعظم کے اشتہار جاری کرنے کی ہدایت کردی۔

فاروق ایچ نائیک کہہ رہے ہیں کہ آصف زرداری کے پیش ہونے سے رش ہو جائے گا۔ نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر

یہ انتظامیہ کا کام ہے کہ وہ رش کو کنٹرول کریں۔ نیب پراسیکیوٹر

ان کے ساتھ کوئی رعایت نہ کی جائے اور ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کیے جائیں۔ نیب پراسیکیوٹر

یوسف رضا گیلانی کو عدالت نے استثنیٰ دیا تو آج ان کا وکیل بھی پیش نہیں ہوا۔ سردار مظفر

اس لیے یوسف رضا گیلانی کا استثنیٰ بھی ختم کیا جانا چاہیے۔ نیب پراسیکیوٹر

آصف علی زرداری کو ہائی کورٹ نے میڈیکل گراؤنڈز پر ضمانت دی تھی۔ فاروق ایچ نائیک

وارنٹس تو تب جاری کیے جائیں جب آصف زرداری پیش نہ ہوں۔ وکیل

میں آصف زرداری کی جانب سے یہاں موجود ہوں۔ وکیل

آئندہ سماعت پر آصف علی زرداری خود بھی عدالت میں پیش ہو جائیں گے۔ وکیل

یوسف رضا گیلانی کورونا وائرس کا شکار ہو گئے تھے۔ وکیل

میں بھی یوسف رضا گیلانی کے ساتھ تھا اس لیے میں بھی آئیسولیشن می‍ں چلا گیا تھا۔ وکیل

اگر عدالت کہتی ہے تو میں عدالت میں یوسف رضا گیلانی کی طرف سے بیان حلفی دے دیتا ہوں۔ وکیل

جس کے بعد عدالت نے آصف علی زرداری کے قابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کر دیے۔

آصف زرداری نے حاضری سے استثنی کی درخواست دائر کر رکھی ہے۔ وکیل

سابق صدر آصف علی زرداری کی حاضری سے استثنی کی درخواست مسترد کی جاتی ہے۔ عدالت

آصف زرداری کے وارنٹ جاری نہ کریں وہ سابق صدر پاکستان ہیں وہ کہیں بھاگ نہیں رہے۔ وکیل

میں نے اب آرڈر کر دیا ہے وہ اب واپس نہیں ہو گا۔ جج اصغر علی

عدالت نے آپ سے ایڈریس مانگ کر اس پر سمن جاری کیا تھا لیکن وہ پھر بھی پیش نہیں ہوئے۔ جج

بعدازاں احتساب عدالت نے ریفرنس پر سماعت 17 اگست تک ملتوی کر دی۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے