جمعہ 27 ذوالحجہ 1442ﻫ - 6 اگست 2021

فلسطینی طالبہ ایک سال تک بغیر کسی جرم کے قید رہنے کے بعد رہا

فلسطینی طالبہ کو صہیونی فوج نے 15جولائی 2019ء کو بیت لحم میں تقوع کے مقام پراس کے گھر پرچھاپہ مارکارروائی کے دوران حراست میں لیا تھا۔

صہیونی فوج نے ایک سال تک بغیر کسی جرم کے انتظامی حراست کی غیر قانونی پالیسی کے تحت قید غرب اردن کے جنوبی شہر بیت لحم کے قصبے تقوع سے تعلق رکھنے والی فلسطینی طالبہ شروق محمد البدن کو گزشتہ روز رہا کردیا ۔

انتظامی حراست کی پالیسی کے تحت گرفتاری کے بعد شروق محمد البدن کو بدنام زمانہ قید خانے ہشارون منتقل کردیا گیا جہاں انھیں چھ ماہ قید رکھنے کے بعد دامون نامی حراستی مرکز منتقل کردیا تھا۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے