ہفتہ 10 ربیع الاول 1443ﻫ - 16 اکتوبر 2021

بھارت نے ٹک ٹاک سمیت 59 چینی ایپس پر پابندی عائد کردی

بھارت نے ٹک ٹاک سمیت 59 چینی ایپس پر پابندی عائد کردی ہے، بھارتی حکومت نے چینی کمپنیوں کی 59 ایپس کو ملکی سلامتی کیلئے خطرہ قرار دے کر بین کردیا ہے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ٹک ٹاک، شئیراٹ، یو سی براؤزر سمیت 59 ایپس کو بلاک کر دیا گیا ہے۔ بھارتی حکومت نے موبائل ایپس کو ملکی سلامتی کیلئے خطرہ، ملکی خودمختاری کیلئے متعصب اور بھارتی دفاع کیلئے نقصان دہ قرار دیتے ہوئے بند کردیا ہے۔
بھارتی وزارتِ الیکٹرونکس اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ معلومات کی چوری اور سیکیورٹی وجوہات کی بنا پر ان ایپس پر پابندی لگائی جا رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ 130کروڑ عوام کے تحفظ اور انکی معلومات کو خفیہ رکھنے کیلئے یہ اقدام اٹھایا جارہا ہے۔

واضح رہے کہ بھارت اور چین کے درمیان کشیدگی کی وجہ سے بہت سے مسائل پیدا ہوئے ہیں اور انہی میں سے ایک مسئلہ چینی ٹیکنالوجی پر پابندی کا ہے۔ بھارت نے کئی چینی ایپس پر پابندی نافذ کردی ہے۔ لیکن اسکی وجہ سے بھارت میں لاکھوں لوگوں کا روزگار بند ہوجائے گا۔ بھارت میں اس وقت لاکھوں ٹک ٹاکرز اسی ایپ پر ویڈیوز بنا کر پیسے کما رہے تھے جبکہ ڈی یو ریکارڈر ایپ کو استعمال کر کےلوگ ویڈیوز بنا کر یو ٹیوب سے بھی پیسے کما رہے تھے لیکن اب ان سے یہ سہولت چھن گئی ہے۔ بھارت میں جہاں پہلے ہی بے روزگاری کی شرح بہت بلند ہے اب وہاں مزید لاکھوں لوگ بے روزگار ہوجائیں گے۔

یہ بھی دیکھیں

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا حکم۔ 

سعودی عرب: دہشت گردی میں ملوّث داعش کے پانچ مشتبہ ارکان کو سزائے موت کا …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے