جمعرات 3 رمضان 1442ﻫ - 15 اپریل 2021

صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا اوکلاہوما میں متنازع انتخابی جلسہ اورکورونا متاثرین کی تعداد میں اضافہ


‎امریکہ کے ایک اعلیٰ طبی عہدیدار نے کہا ہے کہ گذشتہ ماہ امریکہ کے صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا اوکلاہوما میں متنازع انتخابی جلسہ وہاں کورونا وائرس متاثرین کی تعداد میں اضافے کی ممکنہ طور پر وجہ بنا۔
یہ جلسہ ریاست اوکلاہوما کے شہر ٹلسا میں منعقد کیا گیا تھا۔
خبر رساں ادارے روئٹرز نے شہر کے ہیلتھ ڈائریکٹر ڈاکٹر بروس ڈارٹ کے حوالے سے بتایا ہے کہ ٹلسا میں گذشتہ دو روز میں کورونا کے سینکڑوں نئے متاثرین سامنے آئے ہیں۔
جب ان سے ایک رپورٹر نے پوچھا کہ کیا بینک آف اوکلاہوما سینٹر میں 20 جون کو ہونے والا جلسہ اس اضافے کی وجہ ہے تو انھوں نے کہا: ’گذشتہ چند دنوں میں یہاں تقریباً 500 نئے متاثرین سامنے آئے ہیں۔ اور ہم جانتے ہیں کہ تقریباً دو ہفتے قبل ہمارے پاس کئی بڑے ایونٹ منعقد ہوئے، چنانچہ میرا خیال ہے کہ ہمیں نقطے ملانے چاہییں۔‘
ان کا اشارہ بظاہر ٹرمپ کے انتخابی جلسے اور اس سے منسلک مظاہروں کی جانب تھا۔
انھوں نے خبردار کیا کہ کئی دنوں تک مزید ٹیسٹنگ کے بعد یہ معلوم ہو سکے گا کہ متاثرین کی تعداد میں اضافہ نیا رجحان ہے یا نہیں۔
دوسری جانب وائٹ ہاؤس کی ترجمان کیلی میکینانی نے کہا کہ انھوں نے بروس ڈارٹ کے اخذ کردہ نتائج کی بنیاد میں موجود ڈیٹا نہیں دیکھا ہے۔
ٹرمپ کی انتخابی مہم کے ترجمان ٹم مرٹاؤ نے کہا ہک ’جب ہزاروں لوگ سڑکوں پر مظاہرے، فساد اور لوٹ مار کر رہے تھے تو کوئی حفاظتی تدابیر اختیار نہیں کی گئی تھیں اور میڈیا نے رپورٹ کیا کہ اس سے کورونا کے متاثرین کی تعداد میں اضافہ نہیں ہوا

یہ بھی دیکھیں

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار کا پیغام۔ 

اسلام آباد :خواتین کے عالمی دن کے موقع پر پی ٹی آئی رہنماء عثمان ڈار …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے