پیر 20 صفر 1443ﻫ - 27 ستمبر 2021

نیپال اپنا نیا نقشہ عالمی برادری اور بھارت کو بھیجے گا

نیپال حکومت وسط اگست تک ملک کا نظرثانی شدہ نقشہ بھارت ، گوگل اور عالمی برادری کو بھیجنے کا ارادہ رکھتی ہے۔

ساوتھ ایشین وائر کے مطابق نیپال نے نظرثانی شدہ نقشہ میں بھارت کے علاقوں لمپیادھرا، لیپولیکھ اور کالاپانی کو شامل کیا ہے اور اس نظرثانی شدہ نقشہ کو دنیا کے سامنے لانے کا نیپالی حکومت نے منصوبہ بنایا ہے۔

نیپال کے وزیر پدما اریال نے بتایا کہ ’ہم نے کالاپانی، لیپولیکھ اور لمپیادھرا علاقوں کو شامل کرتے ہوئے ملک کا جو نقشہ تیار کیا ہے اسے بین الاقوامی ایجنسیز، عالمی برادری اور بھارت کو بھیجنے کی تیاری کر رہے ہیں جبکہ یہ عمل رواں ماہ کے وسط تک مکمل ہوجائے گا۔

انہوں نے کہا کہ نیپال کے تازہ ترین ورژن پر مبنی نقشہ کے 4 ہزار کاپیاں انگریزی زبان میں چھاپی گئی ہیں جسے بین الاقوامی برادری کو بھیجا جائے گا۔ ساوتھ ایشین وائر کے مطابق اس کے علاوہ نظرثانی شدہ نقشہ کی 25 ہزار کاپیوں کی طباعت کی گئی ہے جسے ملک بھر میں تقسیم کیا جائے گا۔

نقشہ کی کاپیاں مختلف محکموں میں مفت تقسیم کی جائیں گی جبکہ عام لوگ اسے 50 نیپالی روپئے میں خرید سکتے ہیں۔

واضح رہے کہ بھارت نے کہا کہ نیپال کی جانب سے اپنے علاقے میں مصنوعی توسیع کے دعوے تاریخی حقائق یا شواہد پر مبنی نہیں ہے اور نہ ہی اسے صحیح ٹھہرایا جاسکتا ہے۔

یہ بھی دیکھیں

بھارت میں دھماکہ، متعدد افراد ہلاک و زخمی۔ 

بھارت میں دھماکہ، متعدد افراد ہلاک و زخمی چینائی: بھارت کے ریاست تامل ناڈو میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے