اتوار 1 جمادی الاول 1443ﻫ - 5 دسمبر 2021

بھارتی پارلیمنٹ نے عوام کے حقوق سلب کرنے کے لیے قانون سازی کی جس کی دنیا میں مثال نہیں ملتی ؛ اسپیکر قومی اسمبلی

پاکستان اپنے کشمیری بھائیوں کے ہمیشہ سے ساتھ کھڑا ہے اور مسئلہ کشمیر کے حل ہونے تک کھڑا رہے گا؛ اسپیکر اسد قیصر

اسلام آباد میں اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا کہ بھارتی آئین سے آرٹیکل 35-A اور 370 کو کالعدم قرار دینا غیر قانونی اورمقبوضہ کشمیرکے آبادیاتی ڈھانچے کو تبدیل کرنے کی مذموم سازش ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارتی پارلیمنٹ نے عوام کے حقوق سلب کرنے کے لیے قانونی سازی کی جس کی دنیا میں مثال نہیں ملتی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے پارلیمنٹ ہاؤس میں تھری ڈی پروجیکٹ شو کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا جو یوم استحصال کے موقع پرمقبوضہ کشمیر میں ڈھائےمظالم کو اجاگر کرنے کے لیے منعقد کیا گیا۔تقریب میں صدر پاکستان ڈاکٹر عارف علوی ، وفاقی وزراء ، چیئرمین کشمیر کمیٹی ، پارلیمنٹیرینز ، میڈیا اور سول سوسائٹی کے نمائندوں ، قومی اسمبلی سیکرٹریٹ کے اعلیٰ افسران اور عملے نے شرکت کی ۔

اسپیکر نے کہا کہ 5 اگست 2019 کے بھارت کی غیر قانونی اور غیر آئینی اقدامات کی مذمت کرنے کے لئے دنیا بھر میں آج یومِ استحصال منایا جارہا ہے۔ انہوں نے کاکہا کہ بھارت کے اس اقدام نے کشمیری عوام کی زندگیوں کو اجیرن بنا دیا ہے اور یہ خطے کے امن کو سبوتاژ کرنے کی مذموم ارادوں کی عکاسی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر گولی سے بلکہ ووٹ کے ذریعے حل کیا جاسکتا ہے اور اس حقیقت کو بھارتی حکومت جتنا جلد سمجھ جائے تو بہتر ہے۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ سات دہائیوں سے زیادہ عرصے سے کشمیری عوام بھارتی جارحیت کو برداشت کر رہے ہیں اور بھا رتی جارحیت اُن کے جذبہ آزادی کو دبانے میں ناکام رہی ہے ۔

اسپیکر نے کہا کہ مسئلہ کشمیر کو اُجاگر کرنے کے لیے انہوں نے دنیا بھر کی پارلیمانوں کے ساتھ رابطہ کیا اور تمام پارلیمانوں خصوصاَ آئی پی یو کے ممبر ممالک کے سپیکروں اور پریذیڈنگ آفسران کو خط لکھے ۔ انہوں نےعالمی برادری سے اقوام متحدہ کی قرادادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لیے کردار ادا کرنے کا مطالبہ کیا۔ انہوں نے اس تقریب کے انعقاد کے سلسلے میں چیئرمین پارلیمانی کشمیر کمیٹی کی کاوشوں کو سراہا اور اس عزم کا اظہار کیا کہ مسئلہ کشمیر کو عالمی سطح پر بھرپور طریقے سے اُجاگر کرنے کے لیے پارلیمانی کشمیر کمیٹی کو مزید فعال بنایا جائے گا۔اسپیکر نے مزید کہا کہ جمعرات سے شروع ہونے والے پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس میں مقبوضہ کشمیر ڈھائے جانے والے مظالم اور 5اگست 2019 کے غیر آئینی اور غیر قانونی اقدام کے خلاف متفقہ طور قرارداد منظور کی جائے گی۔

اس موقع پر صدر اسلامی جمہوریہ پاکستان ڈاکٹر عارف علوی اور وزیر اطلاعات و نشریات اور چیئرمین پارلیمانی کشمیر کمیٹی نے بھی خطاب کیا۔ انہوں نے بھارت کی جانب سے 5اگست 2019 کے غیر قانونی اور غیر آئینی اقدام کی مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری پر مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا کردار ادا کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے