منگل 29 رمضان 1442ﻫ - 11 مئی 2021

بھارتی چوکیوں کے سامنے کشمیری عوام کے بھارتی فوجی قبضے کیخلاف اور آزادئ کشمیر کے حق میں شدید نعرے بازی۔

سیاہ پرچم لرائے گئے بھارتی پرچم کو آگ لگا دی گئی۔

تفصیلات کیمطابق ہندوستان کے یوم آزادی کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کیلیئے ریاست بھر میں مظاہرے کیئے گئے۔ ضلع نیلم کے صدر مقام اٹھمقام میں پاسبان حریت جموں کشمیر کے زیر اہتمام عوام کا جم غفیر بھارت کیخلاف مرکزی شاہراہ پر نکل آیا۔ بھارت مخالف احتجاج میں شریک لوگوں نے سیاہ پرچم اٹھا رکھے تھے سیاہ پٹیاں باندھے کشمیری مظاہرین کے بھارت کیخلاف گو انڈیا گو بیک، بھارتیو غاصبو جموں کشمیر چھوڑ دو، کشمیر کی آزادی تک جنگ رہے گی جنگ رہے گی کے نعرے ۔ لائن آف کنٹرول کے سامنے بھارت کیخلاف نفرت اور غصے کا اظہار کررہے کشمیری مظاہرین نے بھارتی جھنڈے کو آگ لگا دی۔ یوم سیاہ کے احتجاجی ریلی کی قیادت پاسبان حریت جموں کشمیر کے وائس چیئرمین عثمان علی ہاشم، ملک شرافت علی، سید بادشاہ سیاسی، مذہبی اور تاجر راہنماؤں اور طلبہ تنظیموں کے عہدیداران نے کی ۔ بھارت کیخلاف نکالی گئی یوم سیاہ کی احتجاجی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کے بھارت ایک غاصب، جابر اور قابض ملک ہے جس نے جموں کشمیر کے عوام کے حق آزادی کو غصب کر رکھا ہے ۔ بھارت کے پاس کوئی اخلاقی قانونی جواز نہیں کے وہ کشمیری عوام کی آزادی کے حق کو چھین کر خود یوم آزادی منائے ۔ مقررین نے کہا کے گزشتہ تہتر برسوں سے جموں کشمیر کے نہتے عوام آپنی آزادی اور حق خودارادیت کیلیئے جدوجہد کر رہے ہیں لیکن بھارت کی ظالم حکومت نے کشمیری عوام کی تحریک کو کچلنے کیلیئے 9 لاکھ فورسز کو مسلط کر رکھا ہے جو کشمیری عوام کے سیاسی، سماجی اور مذہبی حقوق کو بری طرح پامال کررہی ہیں۔ مقررین نے اقوام متحدہ سے اپیل کی کے وہ بھارت کے زیر قبضہ متنازعہ ریاست جموں کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالیوں ،ظلم و تشدد اور بربریت سے روکے۔ ریلی کے شرکاء نے بنتل شھداء چوک سے بھارتی فوجی چوکیوں کے سامنے تک مارچ بھی کیا۔

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے