اتوار 4 شوال 1442ﻫ - 16 مئی 2021

چھہ ماہ میں مکمل ہونے والا بی آر ٹی پشاور کا منصوبہ تین سال بعد بھی ادھورا ہے : صوبائی وزیر برائے انفارمیشن سائنس و ٹیکنالوجی تیمور تالپور

کراچی : صوبائی وزیر برائے انفارمیشن سائنس و ٹیکنالوجی تیمور تالپور نے کہا ہے کہ چھہ ماہ میں مکمل ہونے والا بی آر ٹی پشاور کا منصوبہ تین سال بعد بھی ادھورا ہے، نیازی اینڈ کمپنی نے اپنی رسوائی سے بچنے کیلئے ادھورے منصوبے کا افتتاح کر دیا، جس کے نتائج عوام بھگت رہے ہیں۔ اپنے ایک بیان میں صوبائی وزیر تیمور تالپور نے کہا کہ بی آرٹی منصوبے میں شامل متعدد مشینیں خراب ہیں، جبکہ کئی اسٹیشن بھی ابھی تک نا مکمل ہیں، عمران نیازی کی قیادت میں نا اہلوں کا ٹولہ عوام کو ہر روز ایک نئے بحران میں دھکیل رہا ہے اور نیا لولی پاپ دے رہا ہے۔ نیازی کے مشیر شہباز گل نے اپنی ویڈیو میں عوام کو دھوکہ دینے کی کوشش کی ہے، انہوں نے پنجاب میں کھڑے ہو کر ویڈیو بنائی اور نام اسے بی آر ٹی پشاور کا دے دیا، اس سے ثابت ہوتا ہے کہ تحریک انصاف والوں کا کوا سفید ہے، اسے کالا کوئی نہیں کہ سکتا۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ موجودہ حکومت داخلہ اور خارجہ دونوں محاذوں پر مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے، عمران خان ہر جنگ میں بزدل رہا ہے۔ ایک جانب دہشت گردوں کے خلاف جنگ میں عمران خان نے مذمت تک نہیں کی دوسری جانب کشمیر کی حق خودرایت پر حملہ ہونے کے بعد وزیراعظم کہتے ہیں کہ جنگ نہیں ہوسکتی!” کشمیر کے معاملہ پر اس حکومت کے کردار سے نہ صرف آزاد اور مقبوضہ جموں و کشمیر بلکہ پاکستان کی عوام بھی مطمئن نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام تو اپنے کشمیری بھائی بہنوں بزرگوں اور نوجوانوں کے ساتھ کھڑے ہیں لیکن آپ کی ناہل حکومت ڈرامے کر رہی ہے۔ افسوس کہ سلیکٹڈ وزیرِاعظم نے نہ صرف مودی سرکار کی الیکشن میں کامیابی کی خواہش کا اظہار کیا بلکہ اسے مسئلہ کشمیر کے حل کے ساتھ جوڑا اور کہا کہ صرف مودی اسے حل کر سکتا ہے۔ نا اہل حکمران اپنے مفادات کے خاطر کشمیر کا سودا کر بیٹھے ہیں صرف عوام کو بے وقوف بنانے کے لیے کبھی ایک منٹ خاموشی کرواتے ہیں کبھی کشمیر ہائی وے کا نام چینج کرنے کی بات کرتے ہیں دراصل ان کو کوئی دلچسپی نہیں ہے۔۔یہ صرف اپوزیشن کے خلاف بکواس کرنے اور ان کے خلاف کیسز بنانے کو حکومت سمجھتے ہیں۔ صوبائی وزیر نے مزید کہا کہ ایک وزیر کا منہ کھلتا ہے تو پوری ائرلائن بند ہو جاتی ہے دوسرے وزیر کے بیان سےدوست ممالک ناراض ہو جاتے ہیں اور کپتان خود منہ کھولیں تو جرمنی چاپان کو آپس میں ملا دیتے ہیں، ساتھ میں القائدہ بنانے کا کریڈٹ بھی اپنی فوج کے گلے ڈال دیتے ہیں۔نیازی صاحب، آپ کی حکومت کو ہر محاذ پہ ناکامی کا سامنا ہے۔ آپ اپنی نالائقی سے معاملات کو خراب سے خراب تک کرتے جارہےہیں۔ آپ کے اندر نہ صلاحیت ہے اور نہ ہی عقل، آپکو حکومت کا تجربہ بھی نہیں ہے کیونکہ آپ مسلط کیے گئے ہیں یہ سب سمجھ آتا ہےلیکن افسوس کہ پھر بھی آپکی ترجیحات میں شروع سے لیکر آخر تک اپوزیشن کے خلاف کیسز بنانا ہپی ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے