اتوار 15 ذوالحجہ 1442ﻫ - 25 جولائی 2021

جوائنٹ ایکشن کمیٹی فار شیعہ مسنگ پرسنز کے تحت گورنر ہاوس کے مرکزی دروازے پر احتجاج تاحال جاری۔

لاپتہ افراد کے اہل خانہ پر پولیس گردی کی مذمت کرتے ہیں ۔رہنما ایم ڈبلیو ایم

پولیس اہلکاروں نے گورنز ہاوس کی جانب بڑھنے والے مظاہرین کو تشدد کا نشانہ بنایا۔رہنما ایم ڈبلیو ایم

لاپتہ افراد کے اہل خانہ بلخصوص خواتین کو تشدد کا نشانہ بنانے کی مذمت کرتے ہیں۔رہنما ایم ڈبلیو ایم

جبری گمشدہ افراد محب وطن ہیں۔علامہ باقر عباس زیدی

ملت جعفریہ کو دیوار سے لگانے کی سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔علامہ باقر عباس زیدی

شیعہ جوانوں کو جبری طور پر غائب کردیا جاتا ہے۔رہنما ایم ڈبلیو ایم

پر امن احتجاج ہر پاکستانی کا آئینی و قانونی حق ہے۔علامہ مبشر حسن

مسنگ پرسن کی بازیابی کےلیے پر امن احتجاج کررہے ہیں۔رہنما ایم ڈبلیو ایم

گورنر سندھ وفاقی نمائندہ ہے جو عوامی مسائل حل کرنے کا ذمہ دار ہے۔رہنما ایم ڈبلیو ایم

شیعہ مسنگ پرسن میں کوئی مجرم ہے تو ایسے عدالتوں میں پیش کیا جائے۔علامہ مبشر حسن

ملت جعفریہ کا آخری بے گناہ اسیر رہا نہیں ہوجاتا ہم احتجاج کرتے رہے گے۔علامہ مبشر حسن

جب تک کوئی وفاقی ذمہ دار ہم سے رابطہ نہیں کرتا ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔ علامہ مبشر حسن

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے