منگل 24 ذوالحجہ 1442ﻫ - 3 اگست 2021

چیئرمین بلاول بھٹو زرداری کا پی پی پی سندھ کی جانب سے پی ٹی آئی حکومت کے خلاف احتجاج پر بیان

سندھ بھر میں ہونے والا احتجاج اب پی ٹی آئی حکومت کی آنکھیں کھولنے کے لیئے کافی ہونا چاہئے۔ پی پی پی کارکنان نے 1973 کے آئین، 18 ویں ترمیم اور این ایف سی کے خلاف سازشوں پر احتجاج کیا۔ پی ٹی آئی حکومت بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ، مہنگائی، بیروزگاری اور غربت کو کنٹرول کرنے میں ناکامی ہو چکی۔ پی پی پی کارکنان نے عوام و معیشت دشمن پالیسیوں کے خلاف اپنے غم و غصہ ظاہر کرنے کے لئے احتجاج کیا۔ کارکنان نے ہر ضلعی ہیڈ کوارٹرز میں پرامن احتجاج ریکارڈ کرای۔

پی ٹی آئی کی وفاقی حکومت نے عوام کو مایوسی و ناامیدی کے دلدل میں بے یارومددگار پھینک دیا ہے۔ پیپلز پارٹی ایک جمہوری پارٹی ہے۔ سلیکٹڈ حکومت کے عوام پر مظالم کے خلاف احتجاج کے لیئے پیپلز پارٹی تمام جمہوری و پرامن طریقے اختیار کرے گی۔ پیپلز پارٹی نے اِس ملک کی خدمت کی ہے۔ پیپلز پارٹی نے بنیادی انسانی و جمہوری حقوق کی جدوجہد کے دوران قیادت سمیت ہزاروں کارکنان کی قربانیاں دی ہیں۔ پیپلز پارٹی ہر صورت میں اپنی میراث کو جاری رکھے گی۔

بھرپور پرامن احتجاج کرنے پر پارٹی کارکننان کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ صوبہ بھر میں ہونے والے احتجاجی مظاہروں کے دوران کسی پر ایک بھی پتھر نہیں پھینکا گیا۔ پی ٹی آئی حکومت اب وہ دیکھ لے جو نوشتہ دیوار ہے۔ سلیکٹڈ حکومت اب عوام کے خلاف سازش کرنے سے باز آجائے۔ متفقہ آئین، اٹھارویں ترمیم، این ایف سی کے خلاف سازشیں اور عوام دشمن پالیسیوں جاری رہیں تو احتجاج کا دائرہ بڑھایا جائے گا۔ دوسرے مرحلے میں احتجاج کا دائرہ تحصیل اور یوسی سطح تک بڑھایا جاسکتا ہے: بلاول بھٹو زرداری کا حکومت کو انتباہ

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے