منگل 6 شوال 1442ﻫ - 18 مئی 2021

وزیراعظم عمران خان نے حکومت اور پارٹی ترجمانوں کے اہم اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ اپوزیشن نے ایف اے ٹی ایف قوانین کی منظوری کے بدلے لکھ کر این آر او مانگا۔


وزیراعظم عمران خان کی صدارت میں حکومت اور تحریک انصاف کے پارٹی ترجمانوں کا اہم اجلاس ہوا جس میں کابینہ ارکان سمیت پی ٹی آئی کے اہم رہنماؤں نے بھی شرکت کی۔ وزیراعظم کے مشیر بابر اعوان نے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس سے متعلق قوانین پر اپوزیشن سے مذاکرات سے متعلق بریفنگ دی۔

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ حکومت ایف اے ٹی ایف کے قوانین کو قومی فریضہ سمجھتی ہے لیکن اپوزیشن نے ان قوانین کی منظوری کی آڑ میں حکومت سے لکھ کر این آر او مانگا۔ قوم نے جن کو مسترد کیا ہے وہ اپنی چوری چھپانے کی کوشش میں لگے ہوئے ہیں۔
وزیراعظم کا مزید کہنا تھا کہ ہماری حکومت نے دو سال تک کڑے وقت، مشکلات اور چیلنجز کا سامنا کیا ہے اور حالات پر قابو پانے میں کامیاب ہوگئے ہیں جس کے بعد اب حکومت کی پوری توجہ معیشت کی بحالی پر ہے۔

اس اہم اجلاس میں ملک کی تازہ سیاسی اور معاشی صورت حال پر بھی تبادلہ خیال کیا گیا اور اس حوالے سے حکومتی بیانیے پر مشاورت بھی کی گئی علاوہ ازیں مشیر برائے پارلیمانی امور بابر اعوان نے وزیراعظم کو ایف اے ٹی ایف قوانین سے متعلق پیش رفت سے بھی آگاہ کیا

یہ بھی دیکھیں

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے لگا۔ 

وزیراعظم عمران خان کا بے گھر افراد کو چھت کی فراہمی کا وعدہ پورا ہونے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے