جمعرات 16 صفر 1443ﻫ - 23 ستمبر 2021

کراچی: پی ایس پی کے سربراہ مصطفی کمال کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے بات چیت

کراچی: پی ایس پی کے سربراہ مصطفی کمال کی احتساب عدالت کے باہر میڈیا سے بات چیت
پاکستان اتنا مایوس کبھی نہیں رہا، اب امید بھی چھن چکی ہے۔ عوام حکومت اور اپوزیشن دونوں سے مایوس ہوچکی ہے۔ پی آئی اے ہیڈکورٹر کو اسلام آباد منتقل کیا جارہا ہے۔  کیا کراچی کوئی مفتوحہ علاقہ ہے؟وفاقی کابینہ نے کراچی کی مردم شماری کو تسلیم کیا ہے۔ مردم شماری میں کراچی کے 70 لاکھ لوگ کم گنے گئے۔ تحریک انصاف اور ایم کیو ایم نے کراچی سے نشستیں حاصل کیں۔ ووٹر لسٹ میں لوگ زیادہ ہیں آبادی میں نہیں۔ ایم کیو ایم نے عوام کو بے وقوف بنانے کے لئے اختلافی نوٹ لکھ دیا۔ اختلافی نوٹ لکھنے سے مردم شماری تسلیم نہیں ہوگی؟ جب تک شہر کا چوکیدار تبدیل نہیں کیا جائے یہ شہر محفوظ نہیں رہ سکتا۔ ایم کیو ایم کو مسئلے پر استعفی دینا چاہیے تھا۔ را ایجنٹوں نے اپنی جے آئی ٹی میں بھارت ٹریننگ بھیجنے میں خالد مقبول صدیقی کا نام لیا تھا۔ را کے ایجنٹوں کو وفاقی وزیر بنا دیا گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی دہری پالیسی ہے۔ نواز شریف اور مولانا فضل الرحمان کے خلاف نیب ریفرنسز بھیجے گئے۔ سابق میئر وسیم اختر کے خلاف کوئی ریفرنس نہیں آیا۔ سابق میئر صاحب کہتے تھے اختیارات نہیں ہیں۔ یہ پیپلز پارٹی کے اتحادی تھے جب اختیارات منتقل ہوئے تھے۔ ہم سے لوگ کہتے ہیں کہ کب تک احتجاج کروگے۔ لوگ سڑکوں پر نکلنے کا مشورہ دے رہے ہیں۔ ہم کسی انتہائی اقدام تک نہیں جانا چاہتے۔
کراچی چل رہا ہے تو ہاکستان چل رہا ہے۔ عمران خان کی حکومت ناکام ہوچکی ہے۔ عمران خان نے ثابت کیا کہ ان میں اور پہلے والوں میں کوئی فرق نہیں۔ کراچی کی کم آبادی کو بنیاد بنا کر ایم کیو ایم نے الیکشن مہم چلائی۔ پیپلز پارٹی سندھ میں عمران خان کی حکومت چلارہی ہے۔ ایک دوسرے کے خلاف فرینڈلی فائر کیا جارہا ہے۔ پی ایس پی مردم شماری کو مسترد کرتی ہے،مصطفی کمال

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے