جمعرات 16 صفر 1443ﻫ - 23 ستمبر 2021

امریکا میں کورونا مریض بھی نسلی تعصب کا نشانہ۔ 

امریکا میں کورونا مریض بھی نسلی تعصب کا نشانہ۔

واشنگٹن : امریکا میں کورونا وائرس کے مریضوں کے علاج معالجے میں رنگ و نسل کا تعصب دیکھا گیا ہے۔ ایک سیاہ فام ڈاکٹر کورونا میں مبتلا رہنے کے بعد دم توڑ گئی۔ اس ڈاکٹر نے طبی عمل میں سفید فام عملے کے تعصبانہ رویے کی شکایت کی تھی۔ یہ شکایت سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی اور صارفین نے امریکی ہیلتھ سسٹم پر شدید تنقید کی۔ تنقید کرنے والوں نے ریاستی حکام سے اس معاملے کی شفاف تفتیش کا مطالبہ بھی کیا۔ دوسری جانب سوشل میڈیا پر بڑی تعداد میں صارفین کی پوسٹوں کو دیکھتے ہوئے امریکی ریاست انڈیانا نے اس واقعے کی مکمل تحقیقات کرانے کا فیصلہ کیا ہے، جس سیاہ فام ڈاکٹر نے بیماری اور علاج میں تعصبانہ برتاؤ کی شکایت کی تھی۔ سیاہ فام ڈاکٹر کا نام سوزن مور اورعمر 52 برس تھی۔ انہیں گزشتہ ماہ کورونا وائرس نے اپنی لپیٹ میں لے لیا تھا۔ بیماری میں شدت آنے کے بعد ڈاکٹر مور کو ریاست انڈیانا کے دارالحکومت انڈیانا پولس کے شمال میں واقع شہر کارمل کے انڈیانا یونیورسٹی سسٹم نارتھ اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔ یہ تفصیلات سماجی رابطے کی ویب سائٹ فیس بک پر بھی پوسٹ کی گئی تھیں۔ ان کا اپنی وڈیو میں کہنا تھا کہ وہ بیماری کی شدت سے آگاہ ہیں اور انہوں نے کئی بار مناسب علاج کی درخواست بھی کی ہے، لیکن اسے نظر انداز کیا جا رہا ہے۔ ڈاکٹر مور کا کہنا تھا کہ اگر وہ سفید فام ہوتی تو ان کے ساتھ طبی عملے کا برتاؤ یکسر مختلف ہوتا۔ انہوں نے واضح کیا کہ دوا دینا تو دور کی بات نارتھ اسپتال کے عملے نے اسکیننگ اور معمول کا معاینہ کرنے کی بھی زحمت گوارا نہیں کی۔ مور نے واضح طور پر بیان کیا کہ انہوں نے ایک سفید فام ڈاکٹر کو اپنی بیماری اور درد کی شدت بھی بیان کی، لیکن اس ڈاکٹر نے ان تفصیلات کو پوری طرح نظرانداز کردیا۔ مور کی ایک وڈیو رواں برس 4 دسمبر کو فیس بک پر اپ لوڈ ہوئی اور اس میں وہ کہہ رہی تھیں کہ اگر میں ایک سفید فام ہوتی تو اس طرح کے سلوک کا سامنا نہیں کرتی۔ اس وڈیو میں یہ بات کرتے ہوئے ان کی آواز شدتِ کرب سے بیٹھ گئی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اس انداز میں سیاہ فام افراد کو ہلاک کیا جاتا ہے، کیوں کہ وہ اکیلے بیماری کا مقابلہ نہیں کر سکتے۔

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے