منگل 12 ذوالقعدہ 1442ﻫ - 22 جون 2021

جمعہ کو وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کے اجلاس میں سول ڈرون اتھارٹی کے قیام کے آرڈیننس کے مسودے کی منظوری دے د ی گئی۔

اسلام آباد: جمعہ کو وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کے اجلاس میں سول ڈرون اتھارٹی کے قیام کے آرڈیننس کے مسودے کی منظوری دے د ی گئی۔ اتھارٹی ڈرونکی تیاری، آپریشن اور درآمد کے قواعد و ضوابط وضع کرنے اور انہیں پاکستان میں ریگولیٹ کرنے کی ذمہ دار ہو گی۔ اتھارٹی میں پاکستان کے مختلف اسٹیک ہولڈرز کے نمائندے شامل ہوں گےاور اس کی سربراہی ڈائریکٹر جنرل کرے گا ۔

نیشنل سینٹر فار روبوٹکس اینڈ آٹومیشن (این سی آر اے) کے ماہرین کی ایک ٹیم نے وزارت سائنس اور ٹیکنالوجی کی رہنمائی میں دستاویز کے مسودے کو تیار کیا ۔ ڈاکٹر عمر شہباز جو این سی آر اے کے ڈائریکٹر ہیں نےہمارے نمائندے سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ ڈرون پر پابندی کی وجہ سے پاکستان 20 ارب ڈالر کی مارکیٹ میں شامل ہونے سے قاصر ہے ۔

ڈاکٹر زوہیب اقبال جو فاسٹ۔ نیشنل یونیورسٹی آف کمپیوٹر اینڈ ایمرجنگ سائنسز اسلام آباد میں ڈائریکٹر ہیں اور ڈرافٹ تیار کرنے والی ٹیم کے رکن ہیں نے ڈرون ٹیکنالوجی کے شعبے میں جدید تحقیق کی ضرورت پر ذور دیا۔ ڈرون اتھارٹی اس شعبے میں تحقیق اور ترقی کو فروغ دانے کی ذمےدار ہو گی۔ انہوں نے بتایا کہ کس طرح ڈرون ترقی یافتہ ممالک میں سامان کی ترسیل اور پولیس کی مدد کر رہے ہیں۔ ڈرون درآمد اور ریگولیشن پالیسیوں کو ہموار کرنا پاکستان میں تکنیکی انقلاب کی جانب ایک اہم قدم ہوگا۔

ڈاکٹر وقار شاہد جو نیشنل یونیورسٹی آف سائنسز اینڈ ٹیکنالوجی کے پروفیسر ہیں نےبتایا کہ اس وقت پاکستان میں ڈرون کی پرواز اور درآمد پر پابندی عائد ہے سوائے اس وقت جب خصوصی اجازت لی جائے۔ ڈرون خصوصی طور پر گنے، کپاس، چاول اور مکئی کی فصل کے لئے فضائی سپرے کا لازمی حصہ بن گئے ہیں۔ ڈرون پاکستان کے سروے کے آئندہ میپنگ منصوبے میں بھی اہم کردار ادا کر سکتے ہیں۔ فی الحال صرف بہت کم ادارے یہ سروس فراہم کرتے ہیں، ان میں سے ایک این سی آر اے کی روبوٹ ڈیزائن اور ڈویلپمنٹ لیب ہے۔ اس طرح شہری مقاصد بالخصوص زراعت کے لئے درآمد اور استعمال میں آسانی پیدا کرنے کے لئے اتھارٹی بنیادی اہمیت کی حامل ہے۔

یہ بھی دیکھیں

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام مذہبی امور

وزارتِ مذہبی امور نے کرونا وبا ء کےسلوگن کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کردیا۔  حکام …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے